Friday, 07 October 2022, 03:30:32 pm
سینیٹ میں متفقہ قراردادمنظور،عالمی برادری پربھارت کےساتھ روابط کےجائزہ پرزور
August 05, 2022

سینٹ نے آج متفقہ طور پر ایک قرار داد منظور کی ہے جس میں عالمی برادری پر زور دیا گیا ہے کہ وہ بھارت کے ساتھ اپنے روابط کا جائزہ لے جو مسئلہ کشمیر پرعالمی انسانی قوانین اور قرار دادوں کو بالائے طاق رکھے ہوئے ہے۔

 قائد ایوان اعظم نذیر تارڑ کی جانب سے پیش کردہ قرارداد میں حکومت سے سفارش کی گئی ہے کہ وہ اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل میں تنازعہ کشمیر کو مزید اجاگر کرنے کےلئے اپنی سفارتی کوششیں تیز کرے۔

قرارد اد میں 5 اگست 2019 کے بھارت کے غیرقانونی اور یکطرفہ اقدامات کو مسترد کردیا گیا  ہے اور یہ بھی کہا گیا ہے کہ یہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرار دادوں کی براہ راست خلاف ورزی ہے جس کا مقصد بھارت کے غیر قانونی زیرتسلط جموں و کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنا اور کشمیریوں کو ان کے پیدائشی حق ، حق خودارادیت کو عملی شکل دینے سے محروم رکھنا ہے جو کہ ان کے سیاسی ،معاشی ، سماجی اور ثقافتی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔

 مقبوضہ وادی میں اجتماعی سزا کے طور پر گھروں اورنجی املاک منہدم کرنے اور ماورائے عدالت قتل سمیت بھارتی مظالم کشمیریوں سے منسلک اردو زبان کی حیثیت اور ان کی شناخت کی تبدیلی کی مذمت کی گئی ہے۔

ایوان کااجلاس غیر معینہ مدت کےلئے ملتوی کردیا گیا۔