Wednesday, 10 August 2022, 04:08:32 am
کنٹرول لائن کے دونوں طرف اوردنیا بھر میں مقیم کشمیریوں نے یوم استحصال منایا
August 05, 2022

بھارت کے غیرقانونی زیرقبضہ جموں و کشمیر میں بھارت کے فوجی محاصرے کے تین سال مکمل ہونے پر آج(جمعہ) ملک بھر میں یوم استحصال بنایا گیا جس کا مقصد کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بھارت کے غیرقانونی، غیراخلاقی اور غیرآئینی اقدام کی مذمت کرنا تھا۔

آج صبح نو بجے ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی۔ ایک منٹ کے لئے ٹریفک بھی روک دی گئی اور سائرن بجائے گئے۔ ایک منٹ کی خاموشی کے فوراً بعد ریڈیو پاکستان، پی ٹی وی اور دیگر ٹی وی چینلوں نے پاکستان اور آزادکشمیر کے قومی ترانے پیش کئے۔یوم استحصال منانے اور غیرقانونی طور پر بھارت کے زیرقبضہ کشمیر کے مظلوم عوام سے اظہار یکجہتی کے لئے آج ملک اور دنیا بھر میں سیمینارز، کانفرنسز اور ریلیوں سمیت مختلف سرگرمیوں کا انعقاد کیا گیا۔پوری قوم نے اپنے کشمیری بھائیوں کو پیغام دیا کہ پاکستان کے عوام حق خودارادیت کی منصفانہ جدوجہد اور بھارتی افواج کے مظالم کے خلاف ان کے ساتھ ہیں۔پانچ اگست 2019ء کو مودی کی زیرقیادت بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت نے بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 اور 35 اے معطل کرتے ہوئے کشمیر کی خصوصی حیثیت کا قانون بھی ختم کر دیا۔بھارت کے غیرقانونی زیرقبضہ جموں وکشمیر میں بھارت کے غیرقانونی اوریکطرفہ اقدامات کی مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری اوربیرون ملک پاکستان کے سفارتی مشنوں نے کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا ۔پانچ اگست 2019ء کے یکطرفہ اقدامات اور اس کے بعد کیئے گئے بین الاقوامی قانون کے صریحاً منافی اقدامات کے خلاف آواز بلند کرنے کیلئے دنیا کے مختلف ممالک میں خصوصی تقریبات اور ریلیاں منعقد کی گئیں جن میں عالمی برادری کے نظریات اور کشمیری عوام کی خواہشات کو اجاگرکیاگیا۔شرکاء نے کشمیری عوام کے خلاف بھارت کی ریاستی دہشت گردی کو بے نقاب کیا جو متعدد رپورٹوں اور ویڈیو شواہد سے ظاہر ہوتی ہے اور جنھیں انسانی حقوق اورانسانی امور کی بااعتماد تنظیمیں اورعالمی میڈیا پیش کرچکا ہے۔پاکستان کی مسلح افواج نے اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق بھارت کے غیرقانونی زیرقبضہ جموں و کشمیر کے بہادر اور جرات مند افراد کی حق خودارادیت کے لئے کی جانے والی جدوجہد میں ان کے ساتھ کھڑے رہنے کے عزم کا اعادہ کیا۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ مقبوضہ وادی میں ظلم و ستم اور بدترین محاصرے کے ایک ہزار پچانوے دن اب ختم ہونے چاہئیں۔بیان میں کشمیری شہداء کو اپنی لازوال قربانیوں پر خراج عقیدت بھی پیش کیا گیا۔