عنایت حسین بھٹی 12جنوری 1928ء کو گجرات میں پیدا ہوئے ۔

نامورگلوکارعنایت حسین بھٹی کی 15ویں برسی ہفتہ کو منائی گئی
31 مئی 2014 (12:53)
0


پاکستان فلم انڈسٹری کے نامور گلوکار ، فلم ساز، صداکار، اداکار، فلم ڈسٹری بیوٹر وکالم نگار عنائت حسین بھٹی کی 15ویں برسی ہفتہ کو منائی گئی۔اس موقع پر ملک کے مختلف نگار خانوں میں آرٹس کونسل کے زیر اہتمام تعزیتی تقریبات منعقد کی گئیں۔عنایت حسین بھٹی 12جنوری 1928ء کو گجرات میں پیدا ہوئے ۔

وہ بیک وقت ایک گلو کار ، اداکار ، ہدایت کار ، مصنف ، سماجی رہنمائ، کالم نگار اور مذہبی سکالر تھے۔ابتداء ہی سے ان کا رجحان صوفی شاعری کی طرف تھا۔ان کی سب سے بڑی خوبی یہ تھی کہ ان کی آواز کی پچ سب سے مختلف تھی۔انہوںنے اپنے عہد میں وارث شاہ ، بلے شاہ، خواجہ غلام فرید اور میاں محمد بخش سمیت عظیم صوفی شعراء کا کلام گایا ۔

1955ء میں ہدائت کا ر نذیر کی فلم "ہیر " میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھائے۔ انہوں نے 1960ء کی دہائی میں تھیٹروں میں گلو کاری کا آغاز کیا جہاں وہ سلطان باہو اور شاہ عبدالطیف بھٹائی کا کلام گایا کرتے تھے۔انہوںنے سینکڑوں فلموں میں اداکاری اور گلو کاری بھی کی۔ان کی مشہور فلموں میں کرتار سنگھ ، وارث شاہ ،دنیا مطلب دی ، عشق دیوانہ ، شہری بابو، چن مکھناں،ظلم د ابدلہ،کوچوان اور سجن بیلی قابل ذکر ہیں۔ ان کے مشہور گانوں میں بھاگاں والیو، آج اکھاں وارث شاہ نوں، نکل کر تیری محفل سے بہت مشہور ہوئے ۔عنائت حسین بھٹی 31مئی 1999ء کو 71 برس کی عمر میں اس دار فانی سے رخصت ہو گئے تھے لیکن وہ اپنے پرستاروں کے دلوں میں آج بھی زندہ ہیں ۔
عنائت حسین بھٹی کی برسی کے موقع پر خصوصی پروگراموں کا انعقاد کیاگیا ۔