وزیراعظم نواز شریف کی زیرصدارت اعلیٰ سطحی اجلاس میں ریاستی عمارتوں پر حملہ کی مذمت

پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس منگل کو ہوگا
31 اگست 2014 (20:33)
0

وزیراعظم محمد نواز شریف کی زیر صدارت اتوار کو یہاں وزیراعظم ہائوس میں اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا 
جس میں دو سیاسی جماعتوں کی طرف سے ریاست کی عمارتوں پر حملہ کی مذمت کی گئی اور اسے غیرجمہوری اور غیرآئینی قرار دیا۔
ایسی کارروائیوں کو ناکام بنانے کیلئے پولیس کی طرف سے اٹھائے گئے اقدامات کو سراہا گیا۔
اجلاس میں وفاقی وزراء اسحاق ڈار، چوہدری نثار علی خان، احسن اقبال، سینیٹر پرویز رشید، زاہد حامد، لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ اور خواجہ سعد رفیق نے شرکت کی۔
اجلاس کے شرکاء نے کہاکہ حکومت نے بات چیت کا راستہ اختیار کیا تاہم اسے دھوکہ دیا گیا اور پیشگی وعدہ کے باوجود حملہ کیا گیا۔
اجلاس نے غیرجمہوری کارروائیوں کو ختم کرنے پر زور دیا اور کہا کہ فریقین کو مذاکراتی میز پر واپس آنا چاہئے۔
وزارت داخلہ کو ہدایت کی گئی کہ جانی نقصان کے بغیر ریاستی اداروں کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے تمام وسائل استعمال میں لائے جائیں۔
وزیراعظم محمد نواز شریف نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ اور سینیٹ میں قائد حزب اختلاف چوہدری اعتزاز احسن کی تجویز سے اتفاق کرتے ہوئے پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس منگل 2 ستمبر کو بلانے پر اتفاق کیا۔ 
اجلاس نے میڈیا کے خلاف تشدد کی چند غیرقانونی کارروائیوں کی بھی مذمت کی۔
وزیراعظم نے وزارت اطلاعات و نشریات و قومی ورثہ کو ہدایت کی کہ ان واقعات کی فوری تحقیقات کی جائے اور معاوضے کے میکنزم کو فوری طور پر یقینی بنایا جائے۔