تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا پارٹی صد ر جاوید ہاشمی کو پارٹی سے نکالنے کا اعلان۔

کوئی بھی ضابطہ اخلاق وزیراعظم ہائوس پر دھاوے کی اجازت نہیں دیتا:ہاشمی
31 اگست 2014 (19:59)
0

پاکستان تحریک انصاف کے صدر مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ پرامن احتجاج سیاسی جماعتوں کا حق ہے لیکن کوئی بھی ضابطہ اخلاق پارلیمنٹ اور وزیراعظم ہائوس پر دھاوا بولنے کی اجازت نہیں دیتا۔
اتوار کو نیشنل پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے مطالبات کا ڈرافٹ وزیراعظم کو بھجوایا تھا جنہوں نے آج اس کا جواب دینا تھا۔
انہوں نے کہا کہ عمران خان نے دھرنے کے مقام پر موجود رہنے کی یقین دہانی کے باوجود آگے بڑھنے کا اعلان کیا۔
جاوید ہاشمی نے کہا کہ گزشتہ شام تک تمام حالات نارمل تھے لیکن وہ اس بات سے بے خبر ہیں کہ وزیراعظم ہائوس کی طرف جانے کیلئے پی ٹی آئی کے چیئرمین کو کس نے قائل کیا۔
انہوں نے کہا کہ وزیراعظم ہائوس کی طرف نہ جانے کا وعدہ کیا گیا تھا لیکن شیخ رشید اور سیف اللہ کا پیغام موصول کرنے کے بعد عمران خان نے آگے بڑھنے کا فیصلہ کیا۔
انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے نائب صدر شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ وہ آزادی مارچ کو وزیراعظم ہائوس تک لے جانے کے حق میں نہیں۔
جاوید ہاشمی نے کہا کہ میں نے عمران خان سے پوچھا کہ ہم پاکستان عوامی تحریک کے پیروکار کیوں بن گئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر طاہر القادری نے آگے بڑھنے کے اپنے اقدام کو عمران خان کے آگے بڑھنے کے فیصلے سے جوڑ دیا۔
انہوں نے کہا کہ عمران خان نے آگے بڑھنے کا فیصلہ لیا جس سے حالات کشیدہ ہوئے۔
انہوں نے کہا کہ اگر عمران خان شاہراہ دستور پر واپس آجائیں تو وہ ایک بار پھر ان کے ساتھ کھڑے ہوں گے۔