31 اگست 2014 (21:48)
0

وفاقی وزیر برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان چوہدری محمد برجیس طاہر نے کہا ہے کہ جس طرح عمران اور قادری کے ورکروں نے ریاستی تنصیبات پر دھاوا بولا جمہوریت کی تاریخ میں اس سے بد تر مثال نہیں ملتی ۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے سانگلہ ہل میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ عمران خان مغربی ممالک کی یونیورسٹیوں میں تعلیم حاصل کرتے رہے ہیں اور مغربی ممالک کی جمہوریتوں کے حوالے دیتے ہیں، وہ یہ بتائیں کہ برطانیہ اور دیگر یورپی ممالک میں کتنی بار پارلیمنٹ پر حملہ کیا گیا۔
کیا آکسفورڈ یونیورسٹی میں سیاسیات کے پروفیسروں نے عمران خان کو یہی تربیت دی کہ ریاست کے خلاف سول نافرمانی کی تحریکیں چلائو اور اہم ریاستی تنصیبات پر دھاوا بولو۔
محترمہ بے نظیر بھٹو سمیت اور بھی کئی سیاستدان برطانیہ میں زیر تعلیم رہے لیکن انہوں نے تو ہمیشہ آئین اور ریاستی اداروں کا احترام کیا۔
سیاستدان تو پھانسی چڑھ جاتے ہیں لیکن ملکی اداروں کی عزت اور تکریم پر حرف نہیں آنے دیتے
وفاقی وزیر نے کہا کہ جو شخص پارٹی میں آمرانہ رویہ اختیار کرتا ہے وہ اقتدار کی کرسی پر بیٹھے گا تو کیا کرے گا۔