نوازشریف نے کہا کہ بلوچستان میں سڑکوں کے بڑے نیٹ ورک کی تعمیر پر کام تیزی سے جاری ہے۔

وزیراعظم کااقتصادی راہداری مغربی حصےکی دوسڑکوں کاسنگ بنیاد
30 دسمبر 2015 (19:25)
0

وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ بلوچستان کے پسماندہ علاقوں کی ترقی کیلئے آئندہ تین سے چار سال میں تقریباً دوسو ارب روپے خر چ کیے جائیں گے۔

وہ بدھ کے روز ژوب کے نزدیک اکاسی کلومیٹر طویل ژوب مغل کوٹ روڈ اور ایک سواٹھائیس کلومیٹر طویل قلعہ سیف اللہ ویگامRud روڈ کی بہتری کی افتتاحی تقریب کے بعد ایک اجتماع سے خطاب کررہے تھے۔
انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں سڑکوں کے بڑے نیٹ ورک کی تعمیر پر کام تیزی سے جاری ہے۔
انہوں نے کہا کہ ان سڑکوں کو دو سال میں بہتر بنالیا جائے گا اس کے علاوہ بلوچستان کو دیگر صوبوں سے ملانے والی دو ہزار چارسو اٹھائیس کلومیٹر طویل سڑکیں مکمل کی جائیں گی۔
انہوں نے کہا کہ آئندہ ماہ گوادر سے خوشاب تک ایک سوچورانوے کلومیٹر طویل سڑک کا افتتاح کیا جائے گا جو پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کا حصہ ہے جبکہ چارسو چون کلومیٹر طویل خوشاب پنجگور باسمہ آئندہ سال مکمل کرلی جائے گی۔
وزیراعظم نے اعلان کیا کہ 243 کلومیٹر طویل خضدار وانگوہل شہداد کوٹ روڈ بھی آئندہ سال تک مکمل کی جائے گی۔
نوازشریف نے کہا کہ ان تمام منصوبوں کے لئے فنڈز حکومت پاکستان سرکاری شعبے کے ترقیاتی پروگراموں سے فراہم کررہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ حکومت ملک کے مختلف حصوں کو ایک دوسرے سے منسلک کرنے کیلئے پاک چین اقتصادی راہداری کے مغربی حصے اور موٹرویز کی تعمیر نو پر توجہ دے رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی ترقی ان کی حکومت کی اولین ترجیح ہے کیونکہ اس سے پورے ملک کو فائدہ ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ منصوبے سے پورے خطے کے لئے تجارت اور کاروبار کے مواقع پیداہوں گے۔
وزیراعظم نے اس امید کا اظہار کیا کہ تمام سیاسی جماعتیں قومی خوشحالی کے لئے اور دہشت گردی کے خلاف مل کر کام کریںگی۔
خارجہ پالیسی کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان اپنے تمام ہمسایہ ممالک کے ساتھ خوشگوار تعلقات چاہتاہے انہوں نے کہا کہ ہمسایہ ملکوں کے ساتھ ناخوشگوار تعلقات سے خطے میں خوشحالی نہیں لائی جاسکتی۔
بعد میں ژوب کے ہوائی اڈے پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے آنے والے دنوں میں پاکستان اور بھارت کے تعلقات میں بہتری کی امید ظاہر کی۔
انہوں نے توقع ظاہر کی کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے دورے سے پیدا ہونے والا جذبہ خیر سگالی جاری رہے گا۔
انہوں نے کہا کہ مذاکرات کے ذریعے تمام مسائل حل کیے جاسکتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ پچھلے جمعے بھارتی وزیراعظم کا دورہ پاکستان اس سمت ایک قدم تھا۔
ایک تقریب میں تمام سیاسی قائدین کے ایک اجتماع کے حوالے سے وزیراعظم نے کہا کہ قومی تقریب میں سب کا اکٹھے ہونا نیک شگون ہے انہوں نے کہا کہ اس سے ملک میں ترقی اور خوشحالی کے ایک نئے دور کا آغازہوگا۔
جمعیت العلمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری قومی ترقی کی جانب ایک قدم ہے۔
پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے رہنما محمود خان اچکزئی نے کہا کہ ان کی جماعت ملک کو پرامن اور خوشحال بنانے کیلئے پاکستان مسلم لیگ (ن) کی کوششوں میں اس کے ساتھ ہے۔
نیشنل پارٹی کے رہنما حاصل خان بزنجو نے اعتراف کیا کہ وزیراعظم نواز شریف کی قیادت میں ملک ترقی کی راہ پر گامزن ہے۔
عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ میاں افتخار حسین نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری کے مغربی روٹ سے عسکریت پسندی ختم کرنے میں بھی مدد ملے گی۔
پاکستان مسلم لیگ (ق) کے سینیٹر مشاہد حسین سید نے کہا کہ نواز شریف کے وژن سے ترقی کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔
بلوچستان کے وزیراعلیٰ ثناء اللہ زہری نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے توقع ظاہر کی کہ ترقیاتی منصوبوں سے صوبے میں انقلاب آئے گا۔