صدر نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قانون نافذ کرنے والے اداروں اور قبائلی عوام کی قربانیوں کو سراہا۔

انتہا پسندی،دہشت گردی کا خاتمہ کر دیاگیا:صدر ممنون
30 دسمبر 2015 (17:54)
0

صدر ممنون حسین نے کہا ہے کہ انتہا پسندی اور د ہشت گردی کا خاتمہ کر دیا گیا ہے اور ملک میں نیا سنہری دور شروع ہوگیا ہے۔

انہوں نے بدھ کی سہ پہر پشاور میں پہلے گورنر خیبرپختونخوا فاٹا یوتھ فیسٹیول کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قوم کو دہشت گردوں کے رحم وکرم پر نہیں چھوڑا جاسکتا۔
انہوں نے کہا کہ د ہشت گردو ں کے خلاف آپریشن ضرب عضب آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جاری رہے گا اور اب دہشت گرد اپنی مذموم سرگرمیوں کیلئے نوجوانوں کو استعمال نہیں کرسکیں گے۔
صدر نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قانون نافذ کرنے والے اداروں اور قبائلی عوام کی قربانیوں کو سراہا۔
انہوں نے یقین دلایا کہ قبائلی عوام کے مسائل ترجیحی بنیاد پر حل کیے جائیں گے اور انہیں قومی دھارے میں شامل کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ عارضی طور پر بے گھرہونے والے تمام افراد کو عزت اور وقار سے ان کے گھروں کوواپس بھیجا جائے گا۔
صدر نے کہا کہ حکومت تعلیمی اداروں میں نیا نصاب متعارف کرانے پر کام کررہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ ملکی معیشت درست سمت کی جانب گامزن ہوگئی ہے اور عوام پاک چین اقتصادی راہداری کے ثمرات سے مستفید ہوں گے انہوں نے کہا کہ توانائی کے منصوبے بھی اس راہداری منصوبے کا حصہ ہیں۔
صدر نے فاٹا میں جدید تربیتی سہولتوں سے آراستہ سپورٹس کمپلیکس تعمیر کرنے کی ہدایت کی۔
بعد میں انہوںنے کھلاڑیوں میں ٹرافیاں اور انعامات تقسیم کیے۔
اس سے پہلے خیبرپختونخوا کے گورنر سردارمہتاب احمد خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ دہشت گردوں کی کمر توڑ دی گئی ہے۔