قومی اسمبلی میں کشمیری شہدا اور سانحہ مالاکنڈ میں جاں بحق ہونیوالوں کیلئے فاتحہ خوانی۔

رویت ہلال کمیٹی چاند بارے فیصلہ اتفاق رائے سے کرتی ہے،سردار یوسف
29 مئی 2017 (20:32)
0

قومی اسمبلی کا اجلاس سپیکر ایاز صادق کی صدارت میں پیر کی شام اسلام آباد میں پھر شروع ہوا۔
ایوان میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی قابض فوج کے ہاتھوں شہید کئے گئے بارہ کشمیری نوجوانوں کیلئے فاتحہ خوانی کی گئی۔
ایوان نے مالاکنڈ سانحے میں جاں بحق ہونے والے افراد کیلئے بھی فاتحہ خوانی کی۔
مذہبی امور اور بین المذاہب ہم آہنگی کے وزیر سردار محمد یوسف نے کہا ہے کہ مرکزی رویت ہلال کمیٹی چاند کے حوالے سے فیصلہ ہمیشہ اتفاق رائے سے کرتی ہے۔
ساجد نواز کے ایک نقطہ اعتراض کو جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بائیس ارکان پر مشتمل مرکزی رویت ہلال کمیٹی میں ملک کے تمام حصوں اور مسالک کی نمائندگی ہے اور یہ مختلف حلقوں کی آراء کا احترام کرتی ہے۔
وزیر مذہبی امور نے کہا کہ منیب الرحمان معروف اسلامی سکالر ہیں وہ وہ کمیٹی کے تمام ارکان کی آراء کا احترام کرتے ہیں۔
آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ پر بحث کا آغاز کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کی رہنماء شازہ فاطمہ خواجہ نے کہا کہ حکومت کی پالیسیوں میں تسلسل سے ظاہر ہوتا ہے کہ ملک میں جمہوریت مضبوط ہوئی ہے۔
بحث میں حصہ لیتے ہوئے نعیمہ کشور نے کہا کہ حکومت کی دانشمندانہ پالیسیوں کی بدولت پاکستان کی معیشت ترقی کر رہی ہے۔
سید عیسیٰ نوری نے کہا کہ گوادر کو بجلی اور پینے کے صاف پانی کی شدید قلت کا سامنا ہے ۔ انہوں نے حکومت پر زور دیا کہ وہ گوادر کے لوگوں کی مشکلات کے ازالے کے لئے اقدامات کرے۔
محمود بشیر ورک نے کہا کہ بعض عناصر تمام شعبوں میں ملک کی ترقی کو نقصان پہنچانے کی کوششیں کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی اقتصادی ترقی سے متعلق امور پر سیاست نہیں کی جانی چاہئیے ۔
ایوان کا اجلاس اب کل دن گیارہ بجے ہو گا۔