وزیر خزانہ نے کہا ہے کہ گزشتہ چند برسوں میں محصولات کی وصولیوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔

سینیٹ کی سفارشات کو مکمل طور پر بجٹ میں شامل کیا جائے گا:ڈار
29 مئی 2017 (14:47)
0

وزیر خزانہ اسحق ڈار نے صوبائی حکومتوں پر زو ر دیا ہے کہ وہ آزاد کشمیر ، گلگت بلتستان اور فاٹا کی ترقی کے لئے فراخدلی کا مظاہرہ کریں۔آج سینٹ میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوںنے کہا کہ بجٹ کی منظوری کے بعد اس معاملے پر صوبائی وزرائے اعلیٰ کا اجلاس ہوگا۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ چند برسوں میں محصولات کی وصولیوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے اور قابل تقسیم محاصل میں قبائلی علاقہ جات، آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان کے حصے سے وفاقی اکائیوں کے لئے مختص بجٹ متاثر نہیں ہوگا۔
وزیر خزانہ نے یقین دلایا کہ اگلے بجٹ کے بارے میں ایوان کی اچھی سفارشات مکمل طورپر شامل کی جائیں گی۔انہوں نے یاد دلایا کہ گزشتہ سال ایوان کی 80سے زائد سفارشات کو بجٹ کا حصہ بنایا گیا تھا انہوں نے یہ بھی یقین دلایا کہ جوائنٹ سیکرٹری کی سربراہی میں وزارت خزانہ کی ٹیمیں گیلریوں میں بیٹھ کرسفارشات کے نکات نوٹ کریں گی۔

آئندہ مالی سال بجٹ پر بحث کا آغاز کرتے ہوئے سلیم مانڈوی والا نے مسلسل پانچواں بجٹ پیش کرنے پر وزیر خزانہ کو مبارکباد دی، تاہم انہوںنے کہا کہ بجٹ میں عام آدمی کیلئے کچھ نہیں ہے، انہوںنے تنخواہوں اور پنشن میں دس فیصد اضافے کو انتہائی قلیل اضافہ قرار دیتے ہوئے کہا اس سے عوام کو اپنی ضروریات پوری کرنے کیلئے مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا۔
انہوںنے کہا کہ ان کی جماعت نے شیڈو بجٹ میں تنخواہوں اور پنشن میں پچیس فیصد اضافے کی تجویز دی ہے ،انہوںنے کہا کہ حکومت کو برآمدی شعبے کی ترقی کیلئے سنجیدگی سے کام کرنا ہوگا۔
چوہدری تنویر نے بجٹ کو مثبت قرار دیا، انہوں نے کہا موجودہ حکومت نے ملک کو پائیدار ترقی کی راہ پر گامزن کردیا ہے ، انہوںنے کہا کہ عالمی مالیاتی ادارے گزشتہ چار سال میں حاصل کی گئی کامیابیوں کو سراہا رہے ہیں۔

ایوان کا اجلاس کل صبح گیارہ بجے تک ملتوی کردیا گیا ہے۔