قدرتی آفات سے نمٹنے سے متعلق صوبائی ادارے نے کہاہےکہ عمرکوٹ میں 1490اورضلع سانگھڑمیں460 خاندانوں کو پچاس پچاس کلوگرام کے گندم کے تھیلے دیئے جاچکے ہیں۔

تھر: خشک سالی سے متاثرہ خاندانوں میں راشن کی تقسیم
29 مارچ 2014 (13:01)
0

قدرتی آفات سے نمٹنے سے متعلق سندھ کا صوبائی ادارہ تھر میں خشک سالی کے متاثرین میں مفت گندم کے تھیلے تقسیم کررہا ہے۔
ادارے کے ڈائریکٹر جنرل نے کراچی میں ذرائع ابلاغ سے باتیں کرتے ہوئے کہا کہ عمر کوٹ میں ایک ہزار چار سو نوے اور ضلع سانگھڑ میں چار سو ساٹھ خاندانوں کو پچاس پچاس کلوگرام کے گندم کے تھیلے دیئے جاچکے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ عمر کوٹ میں ایک ہزار سات سو تہتر اور سانگھڑ میں تین سو مریضوں کا اعلاج کیا گیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ حکومت علاقے میں مویشیوں کے علاج معالجے پر بھی توجہ دے رہی ہے۔

======================

حیدرآباد گیریژن کے جنرل آفیسر کمانڈنگ میجر جنرل انعام الحق نے ضلع تھرپارکر کے خشک سالی سے متاثرہ علاقوں میں قائم فوج کے امدادی اور طبی کیمپوں کا دورہ کیا۔

مٹھی کے علاوہ انہوں نے ننگر پارکر اورشیلوو اور لالو بھیل کے دیہات کا بھی دورہ کیا جہاں انہوں نے خشک سالی سے متاثرہ خاندانوں میں راشن تقسیم کیا۔

==============

قدرتی آفات سے نمٹنے کے قومی ادارے نے کہا ہے کہ تھرپارکر میں خشک سالی سے متاثرہ افراد کیلئے ارضیاتی سروے کیا جارہا ہے۔ایک انٹرویو میں ادارے کے ترجمان نے کہا امدادی سرگرمیوں میں تعلیم صحت اور لائیوسٹاک کے شعبوں پر توجہ دی جارہی ہے۔

 

انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کا بچوں سے متعلق ادارہ یونیسیف، عالمی ادارہ صحت اور اقوام متحدہ کا خوراک کا پروگرام بھی امدادی سرگرمیوں میں حصہ لے رہاہے۔

 

ادھر اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ تھر میں خوراک کی ضروریات کے مسئلے سے نمٹنے کیلئے فوری بنیادوں پر مزید فنڈز کی ضرورت ہے۔