وزیر اطلاعات نے کہا کہ تحریک انصاف کے ارکان کے استعفوں کامعاملہ آئین کے تحت حل کرلیا جائے گا۔

تمام سیاسی جماعتوں نے عدالتی کمیشن کی رپورٹ کو تسلیم کیا ہے:پرویز رشید
29 جولائی 2015 (17:37)
0

وزیراعظم محمد نوازشریف کے زیر صدارت پارلیمانی رہنمائوں کا اجلاس بدھ کو اسلام آباد میں ہوا۔

اجلاس میں دو ہزار تیرہ کے عام انتخابات کے بارے میں عدالتی کمیشن کی رپورٹ پر تبادلہ خیال ہوا۔  اجلاس کے دوران قومی اسمبلی میں ایم کیو ایم اور جمعیت علمائے اسلام (ف) کی جانب سے پاکستان تحریک انصاف کے ارکان کو چالیس دن سے زائد عرصے تک غیر حاضررہنے پر ان کی رکنیت ختم کرنے کے حوالے سے پیش کی جانے والی قراردادوں پر بھی غورکیا گیا۔


بعد میں وزیر اطلاعات پرویزرشید نے صحافیوں سے باتیں کرتے ہوئے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں نے عدالتی کمیشن کی رپورٹ کو سراہا اور اسے تسلیم کیا ہے۔  انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے چاررکنی ٹیم تشکیل دی ہے جسے یہ ذمہ داری سونپی گئی ہے کہ وہ ایم کیو ایم اور جمعیت علمائے اسلام (ف) کے رہنمائوں سے ملاقات کرکے انہیں قومی اسمبلی سے اپنی قراردادیں واپس لینے پر قائل کرے۔

ٹیم وفاقی وزراء اسحاق ڈار \' سعد رفیق اور پرویزرشید اور وزیراعظم کے مشیر عرفان صدیقی پرمشتمل ہے۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے ارکان کے استعفوں کامعاملہ آئین کے تحت حل کرلیا جائے گا۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ تمام سیاسی قوتوں کوملک کو درپیش مسائل کے حل کیلئے ملکر کام کرنا چاہیے۔  انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے کنٹینر کی سیاست کے بجائے جمہوریت کی حمایت کرنے والوں کو سراہا۔  اجلاس میں شریک سیاسی رہنمائوں نے وزیراعظم کے سیاسی وژن ' بصیرت اور مفاہمت کے جذبے کی تعریف کی۔


اجلاس میں سید خورشید شاہ ' مولانا فضل الرحمن ' رشید گوڈیل ' محمود خان اچکزئی ' اعجاز الحق ' سراج الحق' غلام احمد بلور ' خالد مقبول صدیقی اور مشاہد حسین سید نے شرکت کی۔