وزیر خزانہ نے کہا کہ حکومت نے توانائی کی ضروریات پوری کرنے کیلئے کئی منصوبے شروع کئے ہیں۔

حکومت2018ء تک ملک کو توانائی کے شعبے میں خود کفیل بنائیگی:ڈار
29 اگست 2016 (20:35)
0

وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ حکومت دوہزار اٹھارہ تک ملک کو توانائی کے شعبے میں خودکفیل بنائے گی۔
انہوں نے یہ بات پیر کی شام اسلام آباد میں اقتصادی راہداری کانفرنس اور ایکسپو کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ حکومت نے ملک کی توانائی کی ضروریات پوری کرنے کیلئے پن بجلی ، کوئلے اور ہوا سمیت تمام وسائل کو بروئے کار لا کر ملک بھر میں بجلی کے کئی منصوبے شروع کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت توانائی کے منصوبوں سے یہ ہدف پورا کرنے میں مدد ملے گی اور پاکستان پڑوسی ملکوں کو بھی بجلی برآمد کرنے کے قابل ہو جائے گا۔
وزیرخزانہ نے کہا کہ پاکستان دوہزار پچاس تک دنیا کی معیشتوں میں چالیسویں سے اٹھارہویں نمبر پر پہنچ جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان ایکسچینج کو ایشیئن ٹائیگر سٹاک مارکیٹ قرار دیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ زرمبادلہ کے ذخائر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسی طرح آبی ذخائر بھی تعمیر کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اقتصادی راہداری کے علاوہ تاپی اور کاسا1000 جیسے دوسرے بڑے منصوبوں پر بھی توجہ دے رہی ہے۔
اسحاق ڈار نے کہا کہ افغانستان کو بھی چین پاکستان اقتصادی راہداری سے منسلک کرنے کیلئے بھی مذاکرات جاری ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اقتصادی راہداری سے خطے کی تقدیر بدل جائے گی۔
وزیرخزانہ نے کہا کہ ملک میں امن وامان کی صورتحال میں بہتری کے باعث گزشتہ دو سال کے دوران سب سے زیادہ سیاح پاکستان آئے۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل میں امن وامان کی صورتحال مزید بہتر ہوگی۔