وزیراعظم نے اوکاڑہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہونے کہا کہ اوکاڑہ کو گیس کی فراہمی کیلئے 47کروڑ روپے فراہم کئے جائیں گے

29 اپریل 2017 (19:21)
0

وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کی حکومت لوگوں کی زندگی میں نمایاں بہتری لانے کیلئے پر عزم ہے۔
انہوں نے ہفتے کی شام اوکاڑہ میں گیس فراہمی منصوبے کی تقریب کے بعد ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے ملک تین بجلی کی فراہمی بڑھانے کیلئے بجلی کے بہت سے منصوبے شروع کئے ہیں اور 2018تک ملک سے لوڈشیڈنگ کا ہمیشہ کیلئے خاتمہ کردیا جائیگا۔
انہوں نے کہا کہ اوکاڑہ کو ملک کے دوسرے ترقی یافتہ علاقوں کے برابر لانے کیلئے لاہور ملتان موٹروے سے منسلک کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ اس کا ہم نے اپنی اپنی 2013کی انتخابی مہم کا وعدہ کیا تھا جس کو پورا کیا جا رہا ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ اوکاڑہ کو گیس کی فراہمی کیلئے 47کروڑ روپے فراہم کئے جائیں گے سڑکوں کی بہتری پر 20کروڑ روپے اور شہر میں فلائی اوورز کی تعمیر پر 74کروڑ روپے خرچ کئے جا رہے ہیں۔
نوازشریف نے کہا ہے کہ مریضوں کی سہولت کیلئے شہر میں 200بستروں کے موجودہ ہسپتال کو 500بستروں تک توسیع دی جارہی ہے۔ وزیراعظم نے اوکاڑہ میں صنعتی اسٹیٹ قائم کرنے کا بھی اعلان کیا۔

انہوں نے کہا کہ قائد حزب اختلاف کی آج نکالی گئی ریلی میں بہت کم لوگ تھے اوکاڑہ کو ملک کا دل قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لوگ مسلم لیگ ن کو دوبارہ 2018میں اقتدار میں لانے کیلئے پر عزم ہیں۔

نوازشریف نے کہا کہ وہ بہت جلد تیرہ سو میگاواٹ کے ساہیوال کے کوئلے سے چلنے والے بجلی گھر اور گیس سے چلنے والے حویلی بہادر شاہ بلاکی اور پورٹ قاسم بجلی گھروں کا افتتاح کریں گے۔

ہفتےکو  شیر گڑھ میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن عوام کی خدمت کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہے اور حکومت ترقی مخالف عناصر کو خاطر میں لائے بغیر اپنا کام جاری رکھے گی۔
وزیراعظم نے کہا ہے کہ ملک بھر میں سڑکوں ، شاہرائوں اور موٹر ویز کا جال بچھایا جارہا ہے۔
نواز شریف نے کہا کہ حکومت ملک میں توانائی کے بحران پر قابو پانے کیلئے کوششیں کررہی ہے اور بجلی کے منصوبے کم سے کم عرصے اور لاگت میں مکمل کیے جارہے ہیں۔
کاشت کاروں کو درپیش مشکلات کا اعتراف کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت ضروری کھادوں کی قیمتوں میں کمی کے لئے سبسڈی دے رہی ہے۔
وزیراعظم نے کہاکہ بعض سیاسی عناصر اپنے سیاسی مقاصد کیلئے ترقی و خوشحالی کی راہ میں خلل ڈالنا اور اس عمل کو سبوتاژ کرنا چاہتے ہیں۔
اس سے پہلے وزیراعظم نے پنجاب کے علاقے شیر گڑھ میں گندم کی کٹائی مہم کا افتتاح کیا۔
انہوں نے روایتی درانتی سے گندم کاٹ کر مہم کا آغاز کیا۔
اس موقع پر وزیراعظم کو گندم کی مجموعی پیداوار میں پنجاب کے حصے اور کاشت کاروں کو فراہم کی گئی سہولتوں سے متعلق آگاہ کیا گیا۔
انہیں بتایا گیا کہ ملک میں گندم کی مجموعی پیداوار کا 76 فیصد پنجاب میں پیدا ہوتا ہے پنجاب حکومت نے رواں سال کیلئے گندم کا پیداواری ہدف ایک کروڑ نوے لاکھ ٹن سے زائد مقرر کیا ہے۔