جمعیت علمائے اسلام (ف)کے سربراہ نے کہا ہے کہ کچھ عناصر جن کی آف شورکمپنیاں تھیں صرف وزیراعظم کااحتساب چاہتے ہیں جومکمل طورپرغیرمنصفانہ ہے۔

ضابطہ کارآئین کے دائرے میں رہتے ہوئے تیارکیاجاناچاہیے:مولانافضل الرحمان
28 مئی 2016 (12:51)
0

جمعیت علمائے اسلام (ف)کے سربراہ مولانافضل الرحمان نے پانامالیکس کے معاملہ پرضابطہ کارکے بارے میں پارلیمانی کمیٹی کی تشکیل کاخیرمقدم کیا ہے۔ایک انٹرویو میں انہوں نے اس بات پرزوردیا کہ ضابطہ کارآئین کے دائرے میں رہتے ہوئے تیارکیاجاناچاہیے۔
انہوں نے کہاکہ کچھ عناصر جن کی آف شورکمپنیاں تھیں صرف وزیراعظم کااحتساب چاہتے ہیں جومکمل طورپرغیرمنصفانہ ہے۔تمام لوگوں کابلاامتیازاحتساب ہوناچاہیے۔
ایک سوال پرمولانافضل الرحمان نے کہاکہ حزب اختلاف کو اس معاملے پرپرامن احتساب کاحق ہے تاہم اسے اس صورتحال کونمبربنانے کیلئے استعمال نہیں کرناچاہیے۔