دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس ذکریا نے ایک بیان میں کہا کہ سکھ یاتریوں کو اٹاری واہگہ بارڈر پر روک لیا گیا ہے۔

file photo

پاکستان کا سکھ یاتریوں کو لاہور آنے کی اجازت نہ دینے کے بھارتی رویے پر افسوس کا اظہار
28 جون 2017 (17:20)
0

  پاکستان نے سکھ یاتریوں کو جنہوں نے رنجیت سنگھ کی برسی کی تقریبات میں شرکت کیلئے آج لاہور آنا تھا اجازت نہ دینے پر بھارتی رویے پر افسوس ظاہر کیا ہے۔

دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس ذکریا نے آج ایک بیان میں کہا کہ سکھ یاتریوں کو اٹاری واہگہ بارڈر پر روک لیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ نئی دلی میں پاکستانی ہائی کمشنر نے اس مقصد کیلئے پاکستان آنے والے 300سکھ یاتریوں کو ویزے جاری کئے تھے جبکہ 150سے زائد یاتری آج صبح سویرے سے اٹاری اسٹیشن پر انتظار کررہے ہیں۔

ترجمان نے کہا کہ بھارتی حکام پاکستانی کی جانب سے ان کو لانے کیلئے خصوصی ٹرین کے انتظام کے باوجود انہیں آنے کی اجازت نہیں دے رہے ۔

انہوں نے کہا کہ دوطرفہ معاہدے کے تحت مذہبی سیاحت کیلئے سہولیات فراہم کرنا بھارت اور پاکستان دونوں کی ذمہ داری ہے۔ترجمان نے کہا کہ بدقسمتی سے رواں سال کے مختصر عرصہ میں ایسا واقعہ دوسری بار پیش آیا ہے جب سکھ یاتریوں کو ان کے مذہبی تہواروں میں شرکت سے روک دیا گیا۔

انہوں نے امید ظاہر کی کہ بھارت اس مسلہ کو جلد حل کرنے کیلئے موثر اقدامات کرے گا۔