لیگی رہنماؤں نے کہا کہ نوازشریف کو بدعنوانی پر نہیں بلکہ اپنے صاحبزادے سے رقم کی وصولی تسلیم نہ کرنے پر نااہل قرار دیا گیا۔

لیگی رہنماؤں کا منتخب وزرائے اعظم کو آئینی مدت پوری نہ کرنے دئیے جانے پر اظہار افسوس
28 جولائی 2017 (19:44)
0

پاکستان مسلم لیگ نون کے رہنمائوں نے کہا ہے کہ نواز شریف کو کسی بدعنوانی پر نہیں بلکہ اپنے صاحبزادے سے رقم کی وصولی تسلیم نہ کرنے کی بنیاد پر نااہل قرار دیا گیا۔
خواجہ سعد رفیق نے جمعہ کی شام اسلام آبادمیں ایک مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم ملک میں سول بالادستی چاہتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ یہ امرافسوسناک ہے کہ پاکستان میں منتخب وزرائے اعظم کو کبھی اپنی آئینی مدت پوری نہیں کرنے دی گئی۔
انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو ملکی معیشت اور کراچی میں امن کی بحالی ، بلوچستان کے عوام کو قومی دھارے میں لانے اور پاکستان کو ایٹمی طاقت بنانے کی سزا دی گئی۔
بیرسٹر ظفر اللہ نے کہا کہ سپریم کورٹ میں ایک منتخب وزیراعظم کو نااہل قرار دینے کیلئے انصاف کے تقاضے پورے نہیں کیے گئے۔
احسن اقبال نے کہا کہ نواز شریف پاکستان کو حقیقی جمہوریت بنانے کے لئے مسلم لیگ نون کی رہنمائی کرتے رہیں گے، انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو ٹھوس شواہد کی بجائے صرف افواہوں کی بنیاد پر نااہل قرار دیا گیا۔
انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ نون کے کارکنوں کو اپنے قائدپر فخر ہے کیونکہ احتساب کے طویل عمل میں ان کے خلاف کوئی بدعنوانی ثابت نہیں ہوسکی۔
شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہم اس فیصلے کو آئینی اور قانونی طورپر چیلنج کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ نون حقائق عوام کے سامنے رکھے گی۔
انوشہ رحمان نے کہا کہ نواز شریف پاکستانی عوام کے مقبول رہنما ہیں اور وہ عوامی حمایت سے واپس آئیںگے۔