سروے میں کہاگیا ہے کہ جاری مظاہرے پاکستانیوں کی اکثریت کے خیالات کی ترجمانی نہیں کرتے ۔

پاکستان میں اکثریت وزیراعظم نوازشریف کی اقتصادی پالیسیوں کی حامی ہے :پیو سروے
28 اگست 2014 (10:57)
0

وزیراعظم محمد نواز شریف نے برسراقتدار آنے کے بعد ایک سال سے زائد عرصہ میں اپنی مقبولیت 64 فیصد پر برقرار رکھی، اس وقت پاکستانیوں کی بھاری اکثریت وزیراعظم محمد نواز شریف کی پالیسیوں پر بھرپور اعتماد کرتی ہے۔

 

اس بات کا اعتراف معروف عالمی ادارے \'\'پیو ریسرچ سینٹر\'\' کی سالانہ سروے رپورٹ میں کیا گیا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم محمد نواز شریف نے اپنی گذشتہ سال کی مقبولیت کو اس سال بھی برقرار رکھا ہے جبکہ ملک کی سب سے زیادہ آبادی پر مشتمل صوبہ پنجاب میں ان کی مقبولیت 75 فیصد کے ساتھ سب سے زیادہ ہے۔ رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی مقبولیت میں 2012ء سے اب تک غیر معمولی کمی ہوئی ہے۔ دو سال قبل ان کی مقبولیت 70 فیصد تھی جس میں اب تک 17 فیصد کمی واقع ہوئی ہے، 22 فیصد لوگوں نے عمران خان کے بارے میں کوئی رائے دینے سے اجتناب کیا، وہ لوگ جنہوں نے عمران خان کی پالیسیوں کی بناء پر کوئی رائے دینے سے انکار کیا ہے ان میں دو سال کے دوران 11 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

 

\'\'پیو ریسرچ سینٹر\'\' کی رپورٹ کے مطابق اس وقت وزیراعظم محمد نواز شریف اور ان کی حکومت کی پالیسیوں کی بدولت وزیراعظم اور ان کی حکومت دونوں کا گراف اوپر گیا ہے۔ \'\'پیو ریسرچ سینٹر\'\' کی سالانہ رپورٹ کے مطابق وزیراعظم محمد نواز شریف پیشرو کے مقابلہ میں عوام میں کہیں زیادہ مقبول ہیں اگرچہ سابق صدر آصف علی زرداری کو اقتدار سے الگ ہوئے چند ماہ گزرے ہیں لیکن 15 فیصد پاکستانیوں کا خیال ہے کہ وہ کوئی مثبت اثر رکھتے تھے، پاکستانیوں کی بہت بڑی اکثریت طالبات کی تعلیم کی حمایتی ہے، ہر 10 میں سے 8 افراد یعنی 86 فیصد کا خیال ہے کہ طلباء اور طالبات دونوں کیلئے تعلیم مساوی طور پر ضروری ہے۔ \'\'پیو ریسرچ سینٹر\'\' کی تازہ ترین رپورٹ کے مطابق پاکستانیوں کی بہت بڑی تعداد پرامید ہے کہ آئندہ ایک سال کے دوران حکومت کی مثبت معاشی پالیسیوں کی بدولت ملک اقتصادی طور پر مزید بہتری کی طرف گامزن ہو گا۔