بڑھتی ریاستی دہشت گردی کیخلاف بھارت مخالف مظاہرے،وحشیانہ تشدد سے متعدد زخمی
28 اپریل 2017 (20:38)
0

مقبوضہ کشمیر میں بڑھتی ہوئی بھارتی ریاستی دہشت گردی کے خلاف لوگوں نے آج زبردست بھارت مخالف مظاہرے کیے۔
بھارتی پولیس اور فوج کی طرف سے مظاہرین پر طاقت کے وحشیانہ استعمال کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہو گئے۔
لوگ سرینگر، بڈگام ، سوپور، بارہمولہ، اسلام آباد، پلوامہ ، شوپیاں، کولگام ، کپواڑہ ، بانڈی پورہ اور دیگر علاقوں میں سڑکوں پر نکل آئے۔
انہوں نے بھارت کے خلاف اورآزادی کے حق میں فلک شگاف نعرے لگائے انہوںنے کئی مقامات پر پاکستانی جھنڈے بھی لہرائے۔
بھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروں نے متعدد مقامات پر مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے آنسو گیس کے گولے داغے جس کے بعد مظاہرین اور فورسز اہلکاروں کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔
پولیس کی کارروائیوں کے نتیجے میں کئی مظاہرین زخمی ہو گئے۔ کشتواڑ کے علاقے Brahman Mohallah میں ایک نجی تعلیمی ادارے کی دیوار پر بھارت مخالف اور پاکستان کے حق میں نعرے بھی لکھے ہوئے دیکھے گئے۔
ادھر بھارتی فورسز کے ہاتھوں پنز گام میں گزشتہ روز ایک شہری محمد یوسف بٹ کے قتل کے خلاف آج ضلع کپواڑہ میں مکمل ہڑتال کی گئی۔
کٹھ پتلی انتظامیہ نے لوگوں کو شہری کے قتل کیخلاف احتجاجی مظاہرے کرنے سے روکنے کیلئے ضلع کے مختلف علاقوں میں پابندیاں عائد کر رکھی تھیں۔