ڈی جی آئی ایس پی آرنے کہا ہے کہ دہشتگردی پر قابو پانے کیلئے رواں سال یکم جولائی سے اب تک خیبرپختونخواء اور فاٹا میں ایک ہزار چار سو ستر کومبنگ آپریشنز کئے گئے۔

سیکورٹی فورسز نے دہشتگردحملوں کے 14 منصوبے ناکام بنائے : عاصم سلیم باجوہ
27 ستمبر 2016 (15:47)
0

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ سیکورٹی فورسز نے ملک کے مختلف حصوں میں نشاندہی کے بعد دہشتگردی کے چودہ حملوں کو ناکام بنایا ہے۔
آج سہ پہر پشاور میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دہشتگردی پر قابو پانے کیلئے رواں سال یکم جولائی سے اب تک خیبرپختونخوا اور فاٹا میں ایک ہزار چار سو ستر کومبنگ آپریشنز کئے گئے۔
انہوں نے کہا کہ کرسچئن کالونی پشاور اور ڈسٹرکٹ کورٹس مردان پر خودکش حملے والوں کے سات سہولت کاروں کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ دونوں حملوں کی منصوبہ بندی افغانستان میں کی گئی اور دہشتگرد افغانستان سے پاکستان میں داخل ہوئے۔انہوں نے کہا کہ خودکش حملوں کے بارے میں ایساف ، افغان حکومت ، فوج اور خفیہ اداروں کے ساتھ معلومات کا تبادلہ کیا گیا ہے۔
فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا کہ سیکورٹی فورسز نے سرحد پر دہشتگردوں کی نقل وحمل روکنے کیلئے پاک افغا ن سرحد پر بیس چوکیاں قائم کی ہیں۔
ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ فاٹا کے عارضی طور پر بے گھر ہونے والوں کی واپسی کا عمل رواں سال نومبر میں مکمل ہو جائے گا۔انہوں نے کہا کہ اب تک 75 فیصد بے گھر افراد اپنے آبائی علاقوں کو واپس جا چکے ہیں اور ان کی تعمیر نو اور بحالی کا عمل جاری ہے۔