شرکا سیمینار کاحق خود ارادیت کے حصول کیلئے کشمیریوں کی اخلاقی، سیاسی اورسفارتی حمایت جاری رکھنے کے عزم کااعادہ ۔

عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے:مقررین
27 اکتوبر 2016 (20:22)
0

جمعرات کے روز اسلام آباد میں ایک سیمینار کے مقررین نے عالمی برادری اور انسانی حقوق کی تنظیموں پر زوردیا ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کے ہاتھوںانسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کانوٹس لے۔

''مقبوضہ کشمیرمیں انسانی المیہ اوربین الاقوامی ردعمل''کے عنوان سے سیمینار کااہتمام کشمیرانسٹی ٹیوٹ برائے بین الاقوامی تعلقات نے کیاتھا۔
پاکستان کی تمام سیاسی جماعتوں کے نمائندہ مقررین اور آزادجموں وکشمیر کی قیادت نے مقبوضہ کشمیرکے بھائیوں کی حق خود ارادیت کی منصفانہ جدوجہد میں ان کی اخلاقی، سیاسی اورسفارتی حمایت جاری رکھنے کے عزم کااعادہ کیا۔
سینیٹ میں قائدایوان اورمسلم لیگ نون کے رہنما راجہ ظفرالحق نے کہاکہ بہت سے ممالک اور بین الاقوامی تنظیموں نے کشمیر پر پاکستان کے موقف کی حمایت کی ہے۔
پاکستان پیپلزپارٹی کی رہنما شیری رحمان نے کہاکہ بھارت غیرقانونی ذرائع سے کشمیر کے بارے میں حقائق کو تبدیل نہیں کرسکتا۔
تحریک انصاف کے رہنما شبلی فراز نے کہاکہ تمام غیرقانونی نظربند کشمیری رہنمائوں کو رہا کیاجائے۔
آزادجموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی کے سپیکر شاہ غلام قادر نے کہاکہ کشمیر ایک سیاسی مسئلہ ہے اوراسے سیاسی طورپر حل کیاجاناچاہیے۔
اس موقع پر ایک قرارداد متفقہ طورپر منظور کی گئی جس میں مقبوضہ کشمیر کے بھائیوں کے ساتھ مکمل یکجہتی کااظہار کیاگیا۔