دفتر خارجہ کے ترجمان نے سفارتکاروں کے خلاف بھارت کے الزامات سختی سے مسترد کر دئیے ہیں ۔

سفارتکار سے نارواسلوک جیسے بھارتی اقدامات پہلے سے کشیدہ ماحول کو مزید خراب کررہے ہیں:پاکستان
27 اکتوبر 2016 (15:31)
0

پاکستان نے نئی دہلی میں اپنے ایک سفارتی اہلکار کی گرفتاری اور اسکے ساتھ نارواسلوک کی شدید مذمت کی ہے۔دفتر خارجہ کے ترجمان نے ایک بیان میں اپنے سفارتکاروں کے خلاف بھارت کے الزامات سختی سے مسترد کر دئیے۔انہوں نے کہا کہ بھارت اقدام ویانا کنونشن اور سفارتی آداب کی خلاف ورزی ہے اور بھارت کی طرف سے ایسے اقدامات پہلے سے کشیدہ ماحول کو مزید خراب کررہے ہیں ۔
ترجمان نے کہا کہ کشیدگی بڑھا کر مقبوضہ کشمیر میں قابض فوج کے ہاتھوں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے دنیا کی توجہ ہٹانے کی بھارتی کوششیں ہرگز کامیاب نہیں ہو سکتیں۔ پاکستان نے عالمی برادری پر بھی زور دیا کہ وہ بھارت کے مذموم عزائم کا نوٹس لے
ترجمان نے کہا کہ نئی دہلی میں پاکستانی ہائی کمشنر کو آج صبح وزارت خارجہ کی طرف سے طلب کیا گیا۔انہیں بھارتی حکومت کے اس فیصلے کے بارے میں بتایا گیا کہ ہائی کمیشن کے ایک اہلکار کو ناپسندیدہ قرار دیا گیا ہے اور وہ ہفتے کے روز تک ملک چھوڑے دے۔