File photo

مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں کا نے وفاقی بجٹ کو متوازن قرار دیدیا
27 مئی 2017 (11:26)
0

زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے مالی سال دوہزارسترہ۔اٹھارہ کے وفاقی بجٹ کاخیرمقدم کرتے ہوئے اسے ایک متوازن بجٹ قرار دیا ہے جس میں معاشرے کے تمام طبقات کاخیال رکھا گیاہے۔صنعت وتجارت کے ایوانوں کی فیڈریشن کے صدر زبیرطفیل نے حکومت کے اس فیصلے کو سراہا کہ نئے بجٹ میں کوئی اضافی ٹیکس عائد نہیں کیا گیا اور لوگوں کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دیا گیا ہے۔
ایوان صنعت وتجارت لاہور کے صدر عبدالباسط نے کہاکہ پانی اور بجلی کے شعبوں میں مختص فنڈز میں ا ضافے سے توانائی کے بحران سے چھٹکارا پانے میں مدد ملے گی۔ایوان صنعت وتجارت لاہور کے ارکان نے کہاکہ بنیادی ڈھانچے کی ترقی کیلئے مختص فنڈز سے بیرونی سرمایہ کاری کو ترغیب ملے گی۔

انہوں نے زراعت، پولٹری،ٹیکسٹائل کے شعبوں اور انسانی وسائل کی ترقی کیلئے کئے گئے سازگاراقدامات کاخیرمقدم کیا۔کراچی کے تجارتی اورصنعتی طبقے کے رہنمائوں نے نئے بجٹ کو کاروباردوست بجٹ قرار دیا۔
ممتازصنعتکار سراج قاسم تیلی نے کہاکہ بجٹ میں اعلان کردہ ریلیف اقدامات برآمدی اہداف کے حصول میں معاون ثابت ہوں گے۔ممتازتاجر زبیرموتی والا نے کہاکہ نئے بجٹ میں عام آدمی پر کوئی بوجھ نہیں ڈالا گیا۔
سندھ کے ا یوان زراعت کے صدر ڈاکٹرندیم قمر نے کہاکہ زرعی شعبے کیلئے تجویز کردہ مراعات سے فی ایکڑپیداوار میں اضافے میں مددملے گی اور کاشتکاروں کی آمدنی میں اضافے پردو رس اثرات مرتب ہونگے۔

ادھرتاجر برادری کے نمائندوں نے مختلف شعبوں کیلئے مراعات اور ریلیف پر مشتمل اگلے مالی سال کے وفاقی بجٹ کو سراہا ہے۔
ریڈیو پاکستان کے کراچی کے نمائندے الطاف پیرزادو سے باتیں کرتے ہوئے کراچی کے ایوان صنعت وتجارت کے سابق صدر عبداﷲ ذکی نے کہا کہ زراعت اور ٹیکسٹائل کے شعبوں کے لئے اعلان کردہ مراعات سے ان شعبوں میں کارکردگی بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔
کراچی تاجر اتحاد کے عتیق میر نے کہا کہ بجٹ کی روشنی میں عام آدمی کیلئے روزمرہ اشیاء کی ارزاں نرخون پر فراہمی یقینی بنانے کیلئے عملی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔وفاق ہائے ایوان صنعت وتجارت کے سابق صدر ذکریا عثمان نے ملک میں کاروبار کو فروغ دینے کیلئے اعلان کردہ مراعات کو سراہا۔

ملتان ایوان صنعت وتجارت کے سینئر نائب صدر بختاور تنویر شیخ نے کہا کہ بجٹ میں صنعت اور زرعی شعبے کے لئے اعلان کردہ مراعات کے بہتر نتائج برآمد ہوں گے۔
ملتان کے ایک کاشتکار ظفر ملہی نے کہا کہ پھلوں اور دیگر زرعی مصنوعات کی درآمد پر ڈیوٹی میں اضافے سے پاکستان کے زراعت کے شعبوں کو فروغ حاصل ہو گا۔
انہوں نے کہا کہ بجلی کے منصوبوں سے لوڈشیڈنگ پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔

ریڈیو پاکستان کے بہاولپور کے نمائندے سجاد پرویز سے باتیں کرتے ہوئے ایوان صنعت وتجارت بہاولپور کے سابق صدر ظفرشریف نے بجٹ کو زرعی شعبے کیلئے موزوں قرار دیا۔
اقتصادی امور کے ماہر ڈاکٹر علی اعظم نے کہا کہ بجٹ میں ملک بھر میں بنیادی ڈھانچے کی ترقی پر خصوصی توجہ دی گئی ہے جس سے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔