Monday, 13 July 2020, 11:08:04 am
حکومت نے طیارہ حادثے کی تحقیقاتی ٹیم کو اپنی رپورٹ تین ماہ میں پیش کرنے کی ہدایت کی:سرور
May 27, 2020

File Photo

ہوا بازی کے وزیر غلام سرور خان نے کہا ہے کہ طیارے کے حادثے میں جاں بحق ہونے والے تمام افراد کی میتیں ان کے ورثاء کے حوالے کرنے کے سلسلے میں پی آئی اے اپنی ذمہ داری پوری کر رہی ہے۔
انہوں نے ایک بیا ن میں کہا کہ جاں بحق افراد کے ورثا کو فی کس دس لاکھ روپے کی مالی امداد فراہم کرنے کیلئے قومی فضائی کمپنی کے افسران سوگوار خاندانوں کے لواحقین سے رابطہ کر رہے ہیں۔
انہوں نے کہاکہ جاں بحق افراد کے رشتہ داروں اور دیگر افراد کو کراچی میں پی آئی اے کے ایئر پورٹ ہوٹل اور سرکاری ریسٹ ہائوس میں ٹہرایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ36 رشتہ داراور چار خاندان پی آئی اے کے ہوٹل میں قیام پذیر ہیں جبکہ7 خاندان ریسٹ ہائوس میںمقیم ہیں۔
غلام سرور خان نے کہا کہ حادثے میں ہونے والے مالی نقصان کا تخمینہ لگانے کیلئے سروے پہلے ہی شروع کیا جا چکا ہے اور اس کی تکمیل پر پیکج کااعلان کر دیا جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ حکومت نے تحقیقاتی ٹیم کو اپنی رپورٹ تین ماہ میں پیش کرنے کی ہدایت کی ہے انہوں نے کہا کہ ایئربس کی ٹیم بھی رہنمائی فراہم کر رہی ہے اور وہ جہاز کے حادثے کے مقام پر کام کر رہی ہے۔ وزیر نے واضح کیا کہ غیر جانبدارانہ اور شفاف نتائج کے حصول کیلئے پی آئی اے شہری ہوا بازی کے محکمے یا کسی دوسرے فریق کو تحقیقاتی عمل میں شامل نہیں کیا جائے گا۔
انہوں نے عوام سے درخواست کی کہ وہ خود ساختہ ماہرین کی رائے کی بنیاد پر حادثے کی وجوہات کے متعلق اندازے لگانے اور خوف و ہراس پھیلانے سے اجتناب کریں اور معلومات تک محدود رہیں۔
(این این آر، وہاج بشیر)