file photo

بڑھتا ہوا درجہ حرارت غذائی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے خطرہ پیدا کر رہا ہے
26 جون 2017 (21:29)
0

بڑھتا ہوا درجہ حرارت پاکستان کے پائیدار غذائی تحفظ کے حصول کی کوششوں اور بڑھتی ہوئی آبادی کی غذائی ضروریات پورا کرنے کیلئے خطرہ پیدا کررہا ہے۔
موسمیاتی تبدیلی کی وزارت کے ترجمان کے مطابق موسم میں تبدیلی کی وجہ سے غزائی دستیابی کی صورتحال مزیدسنگین ہوگئی اور شدید قحط اور سیلاب کا خدشہ پیدا ہوگیا جس کی وجہ سے ملک بھر میں فصلیں متاثر ہو سکتی ہیں۔
ایک تحقیق کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس صدی کے اختتام تک پاکستان کے درجہ حرارت میں ایک ڈگری کا اضافہ ہو جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ موسمیاتی تبدیلی کے باعث ملک کے مختلف حصوں میں گندم کی پیداوار تین اعشاریہ چار فیصد سے سولہ فیصد تک کم ہوجائے گی۔
عالمی حدت کی وجہ سے ملک کی چاول کی فصل بھی متاثر ہونے کا خطرہ ہے اور اس صدی کے اختتام پر ملک کے تمام حصوں میں چاول کی فصل میں بارہ سے بائیس فیصد تک کمی کا اندیشہ ہےآنے والے برسوں میں عالمی حدت کی وجہ سے مقامی سطح پر ہونے والے اثرات سے گندم اور چاول سمیت مختلف فصلوں میں پانی کی ضرورت میں بے حد اضافہ ہوسکتا ہے۔

ترجمان کے مطابق وزارت موسمیاتی تبدیلی مقامی زراعت اور آبپاشی کے محکموں کی مدد سے موسمیاتی تبدیلی کے زراعت پر مرتب ہونے والے اثرات سے نمٹنے کیلئے کسانوں کو تیار کررہی ہے ۔