Friday, 07 August 2020, 03:28:27 pm
حکومت کورونا وائرس کے چیلنج سے نمٹنے کیلئے حزب اختلاف کی کسی بھی تجویز کا خیر مقدم کرے گی،وزیراعظم
March 25, 2020

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت کورونا وائرس کے چیلنج سے نمٹنے کیلئے حزب اختلاف کی جانب سے کسی بھی تجویز کا خیرمقدم کرے گی ۔
قومی اسمبلی اور سینیٹ کے پارلیمانی رہنمائوں کے اجلاس سے بدھ کے روز اسلام آباد وڈیولنک کے ذریعے خطاب میں انہوں نے سیاسی جماعتوں پرزوردیا کہ وہ آگے آئیں اور صورتحال سے نمٹنے کیلئے حکومت کا ساتھ دیں۔
وزیراعظم نے کہاکہ اس وقت ہمیں مکمل لاک ڈائون اور ٹرانسپورٹ کی مکمل بندش کی طرف نہیں جاناچاہیے کیونکہ اس سے خوراک اور دیگر اشیاء کی فراہمی متاثر ہوگی۔
انہوں نے کہاکہ مکمل لاک ڈائون سے تعمیراتی صنعت پر بھی تباہ کن اثرات مرتب ہوںگے جس سے مزدور طبقہ بے روزگار ہوجائے گا اور ہمیں اس بات کا خیال رکھنا ہوگا ۔
عمران خان نے کہاکہ خوف اور افراتفری میں کیے گئے کسی بھی فیصلے کے منفی اثرات ہوںگے اورہمیں انتہائی اقدام کرنے سے پہلے سوچ بچار کرنی ہوگی ۔
وزیراعظم نے کہاکہ وہ کل قومی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں لاک ڈائون کے منفی اثرات پر اپنا موقف پیش کریںگے۔
انہوں نے کہاکہ حکومت رضا کار فورس بنانے پر کام کررہی ہے تاکہ غریب افراد کو ریلیف کی فراہمی اوراس وباء سے نمٹا جاس کے ۔
صحت کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفرمرزا نے اس موقع پر کہاکہ اب تک ملک میں کورونا کے ایک ہزار کیسز کی تصدیق ہوئی ہے ۔
انہوں نے کہاکہ کورونا وائرس کے 78فیصد کیسز ایران سے آئے اورملکی سطح پر صرف پانچ فیصد کیسز سامنے آئے ہیں۔
قدرتی آفات سے نمٹنے کے قومی ادارے کے چیئرمین لیفٹینٹ جنرل محمد افضل نے کہاکہ حکومت نے کورونا سے نمٹنے کیلئے ضروری سامان اور دیگر اشیاء کی خریداری کیلئے 26 ارب روپے جاری کیئے ہیں۔
انہوں نے کہاکہ عالمگیر وباء کے تناظر میں ضروریات پوری کرنے کیلئے پانچ سو وینٹی لیٹرز ، انجیکشنز ، ماسکز اور دیگر اشیاء کی خریداری کی جائے گی ۔
انہوں نے کہاکہ پچاس ہزار N95 ماسکز سمیت تقریبا پانچ لاکھ ماسک کراچی پہنچ گئے ہیں۔