Sunday, 18 August 2019, 12:47:51 pm
بھارت کو کھلی چھوٹ دیکرپاکستان کو تخفیف اسلحہ پر پابند نہیں کیا جاسکتا،ڈی جی آئی ایس پی آر
March 25, 2019

File photo

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ پاکستان کے ایٹمی اثاثے خطے کو جنگوں سے محفوظ رکھنے کیلئے دفاعی ہتھیار ہیں۔ روس کے خبر رساں ادارے سے ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کا موقف ہے کہ یہ صلاحیت روایتی جنگ کے امکانات کو ختم کرتی ہے۔کوئی بھی سمجھدار ملک جس کے پاس یہ صلاحیت موجود ہے اس کے استعمال کے بارے میں بات نہیں کرے گا۔آصف غفور نے کہا کہ پاکستان ایٹمی ہتھیاروں کے عدم پھیلاو کیلئے اقدامات کرے گا لیکن ایسا کرنا بھارت کے اقدامات سے مشروط ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کو کھلی چھٹی دیتے ہوئے پاکستان کے ہاتھ باندھے نہیں جاسکتے۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے بھارت کایہ دعوی مسترد کردیا کہ اس کا طیارہ گرانے کیلئے امریکی ساختہ طیارہ ایف سولہ استعمال کیاگیا ۔انہوں نے کہا کہ چین کے اشتراک سے تیار کردہ جے ایف 17 تھنڈر لڑاکا طیارہ حالیہ کشیدگی کے دوران استعمال کیاگیا تاہم انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ جہاں دفاع کیلئے ضرورت محسوس کی گئی پاکستان اس کا استعمال کرے گا۔بھارت کے ساتھ کشیدگی کا ذکر کرتے ہوئے میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ بھارتی لڑاکا طیاروں نے 26 فروری کو پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پے لوڈ گرایا جس میں کوئی جانی ومالی نقصان نہیں ہوا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنی فضائی حدود میں رہتے ہوئے پہلے اہداف کا تعین کیا اور پھر نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے صرف بھارتیوں کو بتایا ہے کہ وہ جواب دینے کی صلاحیت رکھتا ہے، انہوں نے کہا کہ پاکستان کے پاس اس کارروائی کی فوٹیج موجود ہے۔ آصف غفور نے کہا کہ پاکستان روس سمیت کسی بھی تیسرے فریق کی ثالثی کا خیرمقدم کرے گا جس سے خطے میں امن قائم ہو۔