Thursday, 02 April 2020, 11:48:34 am

مزید خبریں

 
امریکی صدر کا دورہ ، سیکورٹی کے نام پر مقبوضہ کشمیر میں سخت پابندیاں نافذ
February 25, 2020

فائل فوٹو

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بھارت کے دورے کے دوسرے دن آج سیکورٹی کے نام پر مقبوضہ کشمیر میں سخت پابندیاں نافذ رہیں۔

کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق وادی کشمیرمیں فوجیوں کی اضافی نفری تعینات کردی گئی ہے جبکہ سرینگر کی فضا میں ڈرون پرواز کرر ہے ہیں۔ گاڑیوں کی نقل و حرکت پر کڑی نظر رکھنے کیلئے وادی کشمیر کے تمام داخلی اور خارجی مقاما ت پر چوکیاں قائم کی گئی ہیں۔ ان تمام چوکیوں پر لوگوں کی جامہ تلاشی لی جارہی ہے۔

ادھر وادی کشمیرمیں مسلسل 205ویں دن بھی فوجی محاصرہ اور براڈ بینڈ انٹرنیٹ کی معطلی جاری رہی جبکہ انتظامیہ نے انٹرنیٹ کی بندش میں آئندہ ماہ کی چار تاریخ تک توسیع کا سرکاری طورپراعلان کیا ہے ۔

کل جماعتی حریت کانفرنس کے رہنماء میر شاہد سلیم نے جموں میں ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے بھارت میں اقلیتوں پر فسطائی حکومت کے خلاف متحد ہونے پر زوردیا ہے جو انہیں ملک میں دوسرے درجے کا شہری بنانے پر تلی ہوئی ہے ۔ اجلاس میں متعدد سکھ اور دلت رہنمائوں اور کارکنوں نے شرکت کی ۔