اخبار میں شائع ہونے والے ایک مضمون میں کہاگیاہے کہ وسط ایشیائی اور پاکستانی قیادت کے درمیان اپنے ملکوں کو ایک بڑے اقتصادی زون میں تبدیل کرنے کیلئے تیز تر بنیادوں پر مذاکرات جاری ہیں۔

وزیراعظم نوازشریف وسط ایشیائی ریاستوں سےقریبی تعلقات پربھرپورتوجہ دے رہےہیں:خلیج ٹائمز
24 نومبر 2015 (13:20)
0

وسط ایشیائی اور پاکستانی قیادت کے درمیان اپنے ملکوں کو ایک بڑے اقتصادی زون میں تبدیل کرنے کیلئے تیز تر بنیادوں پر مذاکرات جاری ہیں۔خلیج ٹائمز میں شائع ہونے والے ایک مضمون میں کہا گیا ہے کہ ان ملکوں کی اقتصادی زون بنانے کی خواہش اور سوچ کی عکاسی ازبکستان ، تاجکستان ، بیلا روس اور پاکستان کے درمیان حالیہ سربراہ مذاکرات سے ہوئی ہے۔

مضمون میں مزید کہا گیا ہے کہ وزیراعظم نواز شریف وسط ایشیائی ریاستوں سے قریبی تعلقات قائم کرنے پر بھرپور توجہ دے رہے ہیں۔پاکستان اور وسطی ایشیاء کے ممالک کے درمیان توانائی، قدرتی گیس ، بجلی، پٹرولیم مختلف بڑی صنعتوں میں سرمایہ کاری، تجارت، دوہرے ٹیکسوں کے نظام کے خاتمے ، بعض اشیاء پر کسٹم ڈیوٹی میں کمی اور خاتمے اور بینکاری سمیت دیگر شعبوں میں بات چیت جاری ہے۔


یہ زون بنانے کا عمل چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے سے بھی منسلک کیا جائے گا جو پاکستان کی جنوبی بندرگاہ گوادر سے شروع رہا ہے اور جنوب میں بحیرہ عرب کو چین کے ساتھ ملا ئے گا۔