24 جون 2017 (14:34)
0

پاکستان نے افغانستان کے ساتھ سرحدی گزرگاہوں کی نگرانی مزید بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔اس حوالے سے فیصلہ وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی چیف آف جنرل سٹاف لیفٹیننٹ جنرل بلال اکبر ، رینجرز سندھ کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل محمدسعید اور فرنٹئیر کور بلوچستان کے انسپکٹر جنرل میجر جنرل ندیم احمد کے ساتھ ٹیلی فونک بات چیت کے دوران کیا گیا۔
وزیر داخلہ نے کہا کہ جب بھی سرحدی گزرگاہیں کھولی جاتی ہیں ملک میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں اضافہ ہو تا ہے ۔انہوں نے کہا کہ گزرگاہوں کو نقل وحرکت کے لئے استعمال کرنے والوں کی سخت نگرانی کی جانی چاہئیے۔وزیر داخلہ نے کوئٹہ ، پاراچنار اور کراچی میں دہشت گردی کی کارروائیوں سے متعلق اب تک اکٹھے کئے گئے شواہد کی تفصیلات بھی طلب کیں۔
چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ دہشتگردی کی گھناونی کارروائیاں دہشتگردوں کے خلاف قوم کے عزم کو کمزور نہیں کر سکتیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ایسی بزدلانہ کارروائیوں کا پوری قوت سے جواب دے گا۔
وزیر داخلہ نے ایف سی اور رینجرز کے سربراہوں کو ہدایت کی کہ وہ دہشتگردی کی حالیہ کارروائیوں میں ملوث دہشت گرد تنظیموں اور انکے سہولت کاروں کو بے نقاب کرنے اور انہیں انصاف کے کٹہرے میں لانے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائیں۔