پاکستان اور افغانستان کا دو طرفہ مسائل پر مشاورت اور تعاون کیلئے اعلیٰ سطح کے طریقہ کار وضح کرنے پر اتفاق
24 جون 2016 (15:27)
0

پاکستان اور افغانستان نے دو طرفہ مسائل پر مشاورت اور تعاون کے لئے اعلیٰ سطح کے طریقہ کار وضح کرنے پر اتفاق کیا ہے۔یہ فیصلہ آج تاشقند میں شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس کے موقع پر مشیر خارجہ سرتاج عزیز اورافغان وزیر خارجہ صلاح الدین ربانی کے درمیان ملاقات میں ہوا۔

ملاقات کے بعد جاری کئے گئے مشترکہ اعلامیے میں دونوں فریقوں نے کہا کہ مجوزہ طریقہ کار کی سربراہی سرتاج عزیز اور افغان وزیر خارجہ مشترکہ طور پر کریں گے۔طریقہ کار کے تحت مشترکہ تکنیکی ورکنگ گروپ دونوں ملکوں کے تحفظات کو دور کرے گا۔اس اقدام سے مسائل کے حل اور طورخم سرحد پر حالیہ کشیدگی جیسے پرتشدد واقعات کو دوبارہ رونما ہونے سے روکنے میں مدد ملے گی۔
دونوں ملکوں نے ایک دوسرے کی علاقائی سا لمیت کااحترام کرنے اور ایک دوسرے کے داخلی معاملات میں عدم مداخلت کے اصول پر کاربند رہنے کے عزم کااعادہ کیا۔
سرتاج عزیز اورافغان وزیرخارجہ نے امن کے فروغ ، دہشت گردی سے نمٹنے اور اقتصادی ترقی کے عمل کو تیز کرنے کے لئے دو طرفہ تعلقات کو مضبوط بنانے کی مشترکہ خواہش کا بھی اعادہ کیا۔دونوں فریقوں نے افغانستان میں امن اورمفاہمت کے فروغ کیلئے مشترکہ کوششیں جاری رکھنے کی ضرورت پر زوردیا۔