صدر ممنون حسین اور وزیراعظم نواز شریف کی کابل دھماکوں کی شدید مذمت
24 جولائی 2016 (10:08)
0

پاکستان نے دہشت گردی کے مشترکہ دشمن کے خلاف جنگ کیلئے افغانستان کے ساتھ قریبی روابط قائم کرنے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔

دفتر خارجہ نے اسلام آباد میں ایک بیان میں کابل میں گزشتہ روز دہشت گردی کی بزدلانہ کارروائیوں کی شدید مذمت کی جن میں کئی قیمتی جانیں ضائع ہوئیں۔
دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان ہر قسم کی دہشت گردی کی مذمت کرتاہے۔

صدر ممنون حسین اور وزیراعظم محمد نواز شریف نے بھی کابل میں دھماکوں کی شدید مذمت کی ہے۔

صدر نے اپنے پیغام میں کہا کہ خطے میں امن اور استحکام کے قیام کیلئے دہشت گردی کے خلاف ملکر لڑنا ہوگا۔
انہوں نے دھماکوں میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔
وزیراعظم نے اپنے پیغام میں کابل دھماکوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی ہمارا مشترکہ دشمن ہے جس سے نمٹنے کیلئے مشترکہ کوششیں کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کو دہشت گردی کے خلاف جنگ میں صف اول کے ملک کی حیثیت سے دہشت گردوں کی کارروائیوں کا سامنا ہے۔
نواز شریف نے کہا کہ دہشت گردوں کا کوئی مذہب نہیں اور ان کے دلوں میں انسانیت کا احترام بھی نہیں انہوں نے کہا کہ ان کی وحشیانہ کارروائیوں سے بلاامتیاز آہنی ہاتھوں سے نمٹنا ہوگا۔
وزیراعظم نے آزمائش کی اس گھڑی میں افغانستان کی حکومت اور عوام سے اظہار یکجہتی کیا۔