وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاناما پیپرز میں وزیراعظم نواز شریف کا کوئی ذکر نہیں تاہم اس کے باوجود انہوں نے معاملے کی تحقیقات کیلئے کمیشن بنانے کی ہدایت کی۔

ذاتی مفادات کیلئے کام کرنیوالے احتساب سے خوفزدہ ہیں:پرویز رشید
24 اپریل 2016 (19:21)
0

وزیر اطلاعات پرویز رشید نے کہا ہے کہ ذاتی مفادات کے لئے کام کرنے والے لوگ احتساب سے خوفزدہ ہیں اور پاناما پیپرز کے بارے میں عدالتی کمیشن کے قیام کی مخالفت کررہے ہیں۔

انہوں نے یہ بات اتوار کے روز لاہور میں بیرسٹر ظفر اللہ کے ساتھ ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ پاناما پیپرز میں وزیراعظم نواز شریف کا کوئی ذکر نہیں ہے تاہم اس کے باوجود انہوں نے معاملے کی تحقیقات کیلئے کمیشن بنانے کی ہدایت کی۔
انہوں نے کہا کہ پاناما پیپرز میں وزیراعظم کے خاندان کے کسی رکن پر کوئی غیر قانونی کام کرنے کا الزام عائد نہیں کیا گیا' انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کے خاندان کے کسی فرد نے قومی یا بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی نہیں کی۔
انہوں نے کہا کہ مجوزہ کمیشن بنانے کا مقصد آف شور کمپنیوں کے قانونی پہلوئوں کا جائزہ لینا ہے۔
انسانی حقوق کے بارے میں وزیراعظم کے خصوصی معاون بیرسٹر ظفر اللہ نے عدالتی کمیشن کے قواعد و ضوابط کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ انکوائری کمیشن پاناما میں آف شور کمپنیوں یا کسی اور ملک میں پاکستانی اور پاکستانی نژاد شہریوں کے قانونی اثاثوں سے متعلق اطلاعات کا جائزہ لے گا۔
انہوں نے کہا کہ کمیشن کے پاس سابق اور موجودہ سرکاری عہدیداروں اور ان کی طرف سے سیاسی اثرو رسوخ کے ذریعے اپنے اور اپنے اہل خانہ کے بینکوں سے لیے گئے قرضے معاف کرانے کی تحقیقات کا بھی اختیار ہوگا۔