24 اپریل 2014 (17:16)
0
 وفاقی وزیر خزانہ سینیٹر اسحق ڈار نے کہا ہے کہ مالیاتی نظم و نسق کو بہتربنانا اور اقتصادی نظم و نسق موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے، مضبوط مالیاتی انتظام کے بغیر مالیاتی استحکام حاصل نہیں کیا جا سکتا، مختصر مدتی بجٹ حکمت عملی کے تحت آئندہ تین سال میں مالیاتی خسارہ جی ڈی پی کے تقریباً چار فیصد تک لائیں گے۔ وہ جمعرات کو یہاں مقامی ہوٹل میں مالیاتی نظم و نسق کو مضبوط بنانے سے متعلق ایک ورکشاپ سے خطاب کر رہے تھے۔ ورکشاپ کا انتظام وزارت خزانہ اور ورلڈ بینک گروپ نے کیا۔ وزیر خزانہ نے کہا کہ مالیاتی نظم و نسق کو بہتر بنانا وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے لئے انتہائی اہم ہے، ملک کی ضروریات اور مسلم لیگ (ن) کے اقتصادی ایجنڈے کو سامنے رکھتے ہوئے بہتر اقتصادی نظم و نسق موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ مضبوط مالیاتی انتظام کے بغیر مالیاتی استحکام حاصل نہیں کیا جا سکتا۔