Sunday, 05 July 2020, 05:42:42 pm

مزید خبریں

 
مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں نے سخت فوجی محاصرے میں پاکستان کیساتھ عیدالفطرمنائی
May 24, 2020

فائل فوٹو

آج (اتوار)جب پوری امت مسلمہ عید الفطر کی خوشیاں منا رہی ہے ، کشمیر کے مسلمانوں نے یہ مذہبی تہوار بھارت کی طرف سے نافذ سخت فوجی محاصرے میں گزارا۔

کشمیر میڈیاسروس کے ریسرچ سیکشن کی طرف سے آج عید الفطر کے موقع پر جاری کی جانے والی ایک تجزیاتی رپورٹ میں کہا گیا کہ قابض انتظامیہ نے کشمیریوں کو نمازعیداور بھارت مخالف مظاہروں سے روکنے کیلئے مقبوضہ علاقے کے اطراف و اکناف میں سخت پابندیاں نافذ کردیں اور بھارتی فوجی اور پولیس اہلکار تعینات کر دیے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ رمضان المبارک کے دوران بھارتی ریاستی دہشت گردی میں انتہائی تیزی دیکھی گئی اور اس مہینے کے دوران بھارتی فوجیوں نے محاصرے اور تلاشی کی 472کارروائیوں کے دوران 25بیگناہ کشمیری شہیدکر دیے ۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ فوجیوں کی طرف سے آپریشنوں اور بھارت مخالف پرامن مظاہروں کے دوران طاقت کے وحشیانہ استعمال سے کم از کم 2سو 49افراد زخمی ہو گئے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ بھارتی پولیس اور پیراملٹری اہلکاروں نے رمضان کے مہینے میں گھروں پر چھاپوں کے دوران 1سو 63افراد گرفتار کر لیے۔

ادھرلوگوں نے سرینگر،پلوامہ ،اسلام آباد، شوپیاں ، بڈگام اور دیگر علاقوں میں زبر دست بھارت مخالف مظاہرے کئے۔ انہوں نے بھارت کے خلاف اور آزادی کے حق میں فلک شگاف نعرے لگائے۔

بھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروں نے مختلف مقامات پر مظاہرین کے خلاف طاقت کاوحشیانہ استعمال کیا جسکے نتیجے میں فورسز اہلکاروں اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں ہوئیں اورمتعدد افراد زخمی ہو گئے۔

دریں اثناء کل جماعتی حریت کانفرنس کے ترجمان نے آج سرینگر سے جاری ایک بیان میں کہا کہ کشمیری حق خود ارادیت کے حصول تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔

اس سے پہلے پورے مقبوضہ کشمیر کے عوام گزشتہ رات چاند نظر آنے کے بارے میں جاننے کیلئے پاکستانی چینلز دیکھتے رہے۔

جونہی اس بات کا اعلان کیا گیا کہ پاکستان میں آج عیدالفطر منائی جائے گی۔ اسی طرح کے اعلانات سرینگر اور دیگر قصبوں اور دیہات میں کئے گئے۔

مقبوضہ علاقے کے عوام عید اور یکم رمضان بھارت یا کسی دوسرے ملک کے بجائے ہمیشہ پاکستان کے ساتھ شروع کرتے ہیں۔