صدرکا تاجکستان کے ساتھ تجارتی حجم میں اضافے پر زور
23 جون 2016 (17:11)
0

صدرممنون حسین نے تاجکستان کے ساتھ تجارتی حجم میں اضافے کی ضرورت پر زوردیا ہے ۔

انہوں نے جمعرات کے روز تاشقند میں تاجک صدر امام علی رحمن سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی حجم پچاس کروڑ ڈالر تک پہنچ گیا ہے۔
ممنون حسین نے کہاکہ مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنایا جاناچاہیے کاسا 1000 منصوبے کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ اس منصوبے سے پاکستان کو توانائی کی قلت پرقابوپانے میں مدد ملے گی۔
ممنون حسین نے دہشت گردی کے خلاف دونوں ملکوں کی سیکورٹی ایجنسیوں کے درمیان تعاون پراطمینان ظاہرکیا ۔
انہوں نے کہا تاجک SOMON ائیر کی جانب سے لاہور دوشبنے پروازوں کا آغاز نیک شگون ہے انہوں نے کہاکہ پاکستان اور تاجکستان کے درمیان سڑک ، ریل اور فضائی رابطے پورے خطے کیلئے مفید ہیں۔
تاجک صدر امام علی رحمن نے وزیراعظم محمد نوازشریف کی جلد صحت یابی کی دعا کی۔

دریں اثناء تاشقند میں حضرت امام کمپلیکس کے دورہ کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے صدر نے مسلم ممالک پر زوردیا کہ وہ اسلام کے خلا ف منفی پروپیگنڈہ کا مقابلہ کرنے کے لئے اپنی صفوںمیںاتحاد پیدا کریں۔
انہوں نے کہا کہ مسلم ممالک مشترکہ کوششوں سے چیلنجوں پر قابو پاسکتے ہیں۔
ممنون حسین نے حضرت امام کمپلیکس کے مختلف حصے دیکھے یہ کمپلیکس تعمیراتی یادگاروں اور اسلامک انسٹی ٹیوٹ آف امام البخاری پرمشتمل ہے۔
صدر نے امیرتیمورمیوزیم کا بھی دورہ کیا جس میں ازبکستان کی قدیم تاریخ سے متعلق تین ہزار سے زائد نوادرات موجود ہیں۔