یہ اتفاق رائے انقرہ میں دونوں ملکوں کی اعلیٰ سطح کی سٹرٹیجک تعاون کونسل کے پانچویں اجلاس میں ہوا ۔

پاکستان،ترکی کا خصوصی تعلقات مضبوط سٹرٹیجک شراکت داری میں بدلنے کے عزم کا اعادہ
23 فروری 2017 (18:05)
0

پاکستان اور ترکی نے اپنے خصوصی تعلقات کو مضبوط سٹرٹیجک شراکت داری میں تبدیل کرنے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔
یہ اتفاق رائے جمعرات کے روزانقرہ میں دونوں ملکوں کی اعلیٰ سطح کی سٹرٹیجک تعاون کونسل کے پانچویں اجلاس میں ہوا جس کی صدارت وزیراعظم نواز شریف اور ترک وزیراعظم بن علی یدرم نے مشترکہ طور پر کی۔
بعد میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ فریقین نے سیاست، معیشت، دفاع ، سرمایہ کاری، توانائی، ترقی، سلامتی، رابطے، تعلیم، ثقافت اور سیاحت سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق کیا۔
انہوں نے یقین ظاہر کیا کہ جن معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پر آج دستخط ہوئے ہیں وہ تعلقات کے فروغ کے عمل کو نئی بلندیوں پر لے جائیں گے۔
میاں نوازشریف نے امید ظاہر کی کہ ترکی کا نجی شعبہ پاکستان میں خصوصاًاس کا متاثر کن تشخص اور علاقائی روابط، بنیادی ڈھانچے کی ترقی، صنعت اور ٹرانسپورٹ کے شعبوں پر خصوصی توجہ کے ذریعے وسیع مواقع سے استفادہ کرے گا۔