قائد حزب اختلاف خورشیدشاہ نے کہا سب کو کمیشن پرمکمل اعتماد ہونا چاہیے کیونکہ یہ اعلیٰ عدلیہ کے ماتحت ہوگا۔

مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنمائوں کاوزیراعظم کے سپریم کورٹ کو خط لکھنے کے فیصلے کا خیرمقدم
23 اپریل 2016 (14:47)
0

مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنمائوں نے پانامہ پیپرز کے الزامات کی تحقیقات کیلئے وزیراعظم کے سپریم کورٹ کو خط لکھنے کے فیصلے کا خیرمقدم کیا ہے۔قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ نے کہا وزیراعظم نے حزب اختلاف کے سپریم کورٹ سے تحقیقات کرانے کے بڑے مطالبے کو تسلیم کر لیا ہے۔
ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا سب کو کمیشن پرمکمل اعتماد ہونا چاہیے کیونکہ یہ اعلیٰ عدلیہ کے ماتحت ہوگا۔ایک سوال کے جواب میں انہوںنے کہا تحریک انصاف نے بھی چیف جسٹس کوخط لکھنے کا ہی مطالبہ کیا تھا۔جماعت اسلامی کے امیر سینیٹر سراج الحق نے کہا وزیراعظم کا سپریم کورٹ کوخط لکھنے کااعلان درست سمت میں قدم ہے۔
ریڈیو پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے رہنما بیرسٹر دانیال چوہدری نے کہا تحریک انصاف اور دوسری سیاسی جماعتوں کو قانون اورانصاف کی بالادستی کے لئے کمیشن کے فیصلے کو ماننا چاہیے۔
مسلم لیگ (ن) کے رہنما پیر صابر شاہ نے کہا بعض عناصر پاناما پیپرز کے معاملے پر غلط فہمیاں پیدا کررہے ہیں۔وزیراعظم کے فیصلے کو سراہتے ہوئے مرکزی جمعیت اہل حدیث کے امیر سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا حزب اختلاف کے پاس اب ہنگامہ آرائی کی کوئی وجہ نہیں رہی۔

خیبرپختونخوا میں زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد وزیراعظم کے قوم سے خطاب کو سراہا ہے۔ جس میں انہوں نے پانامہ لیکس کی تحقیقات کے لئے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کی سربراہی میں عدالتی کمیشن تشکیل دینے کااعلان کیا۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ کمیشن کے قیام سے موجودہ کشیدگی میں کمی آئے گی۔