Thursday, 02 April 2020, 11:07:44 am
کنن پوش پورہ اجتماعی بےحرمتی کےالمناک واقعےکے29سال مکمل ہونے پرضلع کپواڑہ میں پابندیاں مزیدسخت
February 23, 2020

قابض بھارتی حکام نے کنن پوش پورہ اجتماعی بے حرمتی کے المناک واقعے کے 29 سال مکمل ہونے پر آج خصوصاً ضلع کپواڑہ میں پابندیاں مزید سخت کردیں۔لوگوں کو اس واقعے کے متاثرین سے اظہار یکجہتی سے روکنے کے لیے ضلع کے تمام داخلی اورخارجی راستوںپر بھارتی فوجیوں کی بھاری نفری تعینات کردی گئی تھی۔ حریت رہنماؤں اور تنظیموں نے اپنے بیانات میں اس گھنائونے جرم کے متاثرین سے اظہار یکجہتی کیاہے۔جموں و کشمیرمسلم کانفرنس کے چیئرمین شبیر احمد ڈار نے ایک بیان میں واقعے کو انسانی تاریخ کے سب سے خوفناک اورالمناک واقعات میں سے ایک قراردیا ۔ کل جماعتی حریت کانفرنس کے رہنما محمد شفیع لون نے سرینگر میں ایک بیان میں امریکہ اور دیگر عالمی طاقتوں پر زور دیاکہ وہ تنازعہ کشمیرکو کشمیریوں کی خواہشات اور امنگوں کے مطابق حل کرکے جنوبی ایشیا میں امن و ترقی کو فروغ دیں۔