بل کے تحت ' الیکشن کمیشن کے اختیارات میں مزید اضافہ کیاگیا ہے تاکہ اسے مزید آزاد اور خودمختار ادارہ بنایاجاسکے۔

file photo

سینٹ نے الیکشن بل2017 کثرت رائے سے منظور کرلیا
22 ستمبر 2017 (19:35)
0

سینٹ نے جمعہ کے روز الیکشن بل2017کی اکثریت سے منظوری دی جس میں ملک میں آزادانہ ' منصفانہ اورشفاف انتخابات یقینی بنانے کیلئے اصلاحات تجویز کی گئی ہیں۔
قومی اسمبلی پہلے ہی اس بل کی منظوری دے چکی ہے بل وزیرقانون زاہد حامد نے پیش کیا تھا اور یہ حزب اختلاف کے ارکان کی طرف سے پیش کردہ بعض ترامیم کے ساتھ منظور کیاگیا ۔
وزیرقانون نے اس موقع پر اظہارخیال کرتے ہوئے کہاکہ بل کی متفقہ منظوری کیلئے طویل غوروخوض کیاگیا۔
بل کے تحت ' الیکشن کمیشن کے اختیارات میں مزید اضافہ کیاگیا ہے تاکہ اسے مزید آزاد اور خودمختار ادارہ بنایاجاسکے۔
بل کے مطابق الیکشن کمیشن انتخابات سے چھ ماہ قبل ایک لائحہ عمل تیارکرے گا اور ہرمردم شماری کے بعد حلقہ بندیاں کرے گا کمپیوٹرائزڈ قومی شناختی کارڈ کے حامل افراد کا ووٹرز کی حیثیت سے خودبخود اندراج ہوجائے گا ۔
بل کے تحت ' نگران حکومت کا دائرہ کار روزمرہ امور کے مطابق طے کردیاگیا ہے اور فوری نوعیت کے امور کے سوا کسی بھی معاملے پراہم پالیسی فیصلے نہیں کرے گا۔