اندرا،عبداللہ معاہدے سے مقبوضہ علاقے میں قتل و غارت اور تباہی ہوئی:گیلانی
22 نومبر 2015 (19:22)
0

مقبوضہ کشمیر میں بزرگ حریت رہنما سید علی گیلانی نے کہا ہے کہ 1975کے اندراعبداللہ معاہدے سے مقبوضہ علاقے میں قتل و غارت اور تباہی ہوئی۔
انہوں نے ان خیالات کا اظہار کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ مفتی سعید کے حالیہ بیان کے جواب میں کیا جس میں انہو ںنے اندرا عبداللہ معاہدے کو تاریخی قرار دیا تھا۔
انہوںنے کہا کہ کشمیری ابھی تک ماضی اور حال کی بھارت نواز حریص قیادت کی غلطیوں کی سزا بھگت رہے ہیں۔
ادھر جموںوکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یاسین ملک نے واضح کیا کہ کشمیر پاکستان اور بھارت کے درمیان کوئی سرحدی تنازعہ نہیں بلکہ یہ کشمیریوں کے حق خود ارادیت کا مسئلہ ہے ۔
کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے ذرائع ابلاغ کو ایک انٹرویو میں کہاکہ بھارت پرامن مظاہروں کی زبان نہیںسمجھتا لہٰذا حریت قیادت کے پاس کٹھ پتلی انتظامیہ کے مظالم کے خلاف اپنی آواز بلند کرنے کا واحد راستہ ہڑتال رہ گیاہے۔
دریں اثنا بھارتی فوج نے ضلع کپواڑہ کے علاقے مانی گاہ میں شدید گولہ باری کا سلسلہ آج دسویں روز بھی جاری رکھا' فوج نے کل رات مجاہدین کے ساتھ جھڑپ کے بعد ہندواڑہ میں بھی تلاش کی بڑی کارروائی شروع کردی۔