ایوان نے 76 ارب روپے سے زائد کے بجٹ کے نظرثانی شدہ تخمینے کی بھی منظوری دی۔

قانون ساز اسمبلی نے94ارب روپے سے زائد کے بجٹ کی منظوری دے دی
22 جون 2017 (19:08)
0

آزاد جموں و کشمیر قانون ساز اسمبلی نے جمعرات کے روز آئندہ مالی سال کے لئے 94 ارب روپے سے زائد کے بجٹ کی منظوری دی ۔
قانون ساز اسمبلی نے مظفر آباد میں اپنے اجلاس میں تمام مطالبات زر بھی اکثریت سے منظور کیے، ایوان نے مالی سال2016-17 ء کے لئے 76 ارب روپے سے زائد کے بجٹ کے نظرثانی شدہ تخمینے کی بھی منظوری دی ۔
بجٹ پر بحث سمیٹتے ہوئے آزاد جموں و کشمیر کے وزیراعظم راجہ فاروق حیدر خان نے پاکستان کے وزیراعظم کی جانب سے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے حجم میں سو فیصد اضافہ کرکے اسے 23 ارب روپے سے زائد کرنے کے اقدام کو سراہا۔
مواصلات، تعلیم، صحت، تعمیر نو اور سیاحت کے ترقیاتی منصوبے30 ارب روپے سے زائد کی لاگت سے مکمل کیے جائیں گے۔
راجہ فاروق حیدر خان نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری کے پہلے مرحلے میں مانسہرہ، مظفر آباد، میرپور، منگلا ایکسپریس وے142 ارب روپے کی لاگت سے تعمیر کی جائے گی۔
آزاد جموں و کشمیر کے وزیراعظم نے کہاکہ اقتصادی راہداری کے تحت ایک ہزار ایک سو چوبیس میگاواٹ کی پیداواری صلاحیت کے کوہالہ اور سات سو بیس میگاواٹ کے Karrotپن بجلی منصوبے بھی مکمل کیے جائیں گے۔
انہوں نے اس سال بلدیاتی انتخابات کرانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ انتخابات میں لوگوں کی زیادہ سے زیادہ شرکت یقینی بنانے کے لئے یونین کونسلوں اور ضلعی کونسلوں کی تعداد بڑھائی جائے گی۔
بعد میں سپیکر نے اجلاس غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دیا۔