رپورٹ جسٹس اعجاز افضل خان کی سربراہی میں عدالت عظمیٰ کے تین رکنی خصوصی بنچ کو پیش کی گئی جو پانامہ پیپرز کے مقدمے کے فیصلے پر عملدرآمد کی نگرانی کر رہا ہے۔