وہ اسلام آباد میں برطانیہ کے بین الاقوامی ترقی کے ادارے کے سربراہ رچرڈ منٹگمری کی سربراہی میں وفد سے باتیں کر رہے تھے۔


 

22 جنوری 2014 (15:06)
0

صدر ممنون حسین نے کہا ہے کہ حکومت ملک میں تعلیم کے فروغ کو اولین ترجیح دیتی ہے اور اس شعبے کے لئے مزید وسائل مختص کرنے کے لئے پرعزم ہے۔وہ آج(بدھ کو) اسلام آباد میں برطانیہ کے بین الاقوامی ترقی کے ادارے کے سربراہ رچرڈ منٹگمری کی سربراہی میں وفد سے باتیں کر رہے تھے۔


ملاقات میں برطانیہ کی جانب سے مختلف شعبوں میں پاکستان کی معاونت اور پاکستان میں ڈیفڈ کے تعاون سے شروع کئے گئے منصوبوں سے متعلق معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا.رچرڈمنٹگمری نے صدر کو بین الاقوامی ترقی کے ادارے ، اسکے کردار اور مختلف شعبوں خصوصاً تعلیم اور صحت کے شعبے میں پاکستان کو فراہم کی جانے والی مدد سے متعلق آگاہ کیا۔


پاکستان اور برطانیہ کے دوطرفہ تعلقات کاذکر کرتے ہوئے صدر نے برطانیہ کی طرف سے پاکستان کی مختلف شعبوں خصوصاً دو ہزار آٹھ کے بعد تعلیم اور صحت کے شعبے میں فراہم کی گئی ایک ارب سترہ کروڑ چالیس لاکھ پونڈ کی ترقیاتی امداد کو سراہا۔انہوں نے ملک کی توانائی کی بڑھتی ہوئی ضرورت کو پورا کرنے کیلئے برطانیہ کے تعاون پر زور دیا۔



اس موقع پر صدر نے ڈیفڈ کے کنٹری ہیڈ کو یقین دلایا کہ انہیںاور ادارے کی ٹیم کو اپنی ذمہ داریوں کی ادائیگی کے دوران ہر ممکن تعاون اور مدد فراہم کی جائے گی جس کا مقصد پاکستان کی سماجی و اقتصادی ترقی کو یقینی بنانا ہے۔
پاکستان میں ملائیشیا کے ہائی کمشنر نے بھی صدر سے ملاقات کی اور دونوں ملکوں کے درمیان دوطرفہ تعلقات اور اقتصادی تعاون پر تبادلہ خیال کیا۔