مقبوضہ کشمیر میں کٹھ پتلی انتظامیہ کا کردارحسب معمول ایک نمونے کی طرح محدود ہو گا
22 دسمبر 2014 (13:23)
0

بزرگ حریت رہنماء سید علی گیلانی کی سربراہی میں قائم فورم نے کہا ہے کہ نام نہاد انتخابات کے نتیجے میں خواہ جو بھی پارٹی اقتدار میں آئے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی وزارت داخلہ کی ہی حکمرانی جاری رہے گی۔ایک بیان میں فورم نے کہا کہ کٹھ پتلی انتظامیہ کا کردار حسب معمول ایک نمونے کی طرح محدود ہو گا جبکہ کشمیر سے متعلق تمام معاملات براہ راست بھارتی وزارت داخلہ طے کرے گی۔


بیان میں محمد یاسین ملک ، مسر ت عالم بٹ ، مشتاق الاسلام ، عبدالغنی بٹ ، عبدالسبحان وانی ، ناصر عبداﷲ پہلان ، مفتی عبدالاحد ، پرویز احمد ، عبدالصمد انقلابی اور دوسرے حریت رہنماؤں اور کارکنوں کی مسلسل حراست کی مذمت بھی کی گئی۔فورم نے تمام سیاسی قیدیوں کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے ایمنسٹی انٹرنیشنل اور انسانی حقوق کی دوسری تنظیموں پر زور دیا کہ وہ گرفتار کشمیریوں کی حالت زار کا فوری نوٹس لیں اور ان کی رہائی کے لئے اپنا اثرورسوخ استعمال کریں۔