امریکی صدر نے وزیر دفاع کی جانب سے 4ہزار فوجی افغانستان بھیجنے کے منصوبے پر دستخط کر دئیے۔

file photo

 ٹرمپ کا افغانستان میں غیر معینہ مدت تک امریکی فوجیوں کی تعیناتی کا اعلان
22 اگست 2017 (11:18)
0

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے افغانستان میں غیر معینہ مدت تک امریکی فوجیوں کو تعینات رکھنے کا ارادہ ظاہر کیا ہے۔

انہوں نے یہ بات آج واشنگٹن کے نزدیک ایک فوجی اڈے پر ٹیلی ویژن خطاب میں افغانستان اور پاکستان سمیت جنوبی ایشیا کے بارے میں امریکی پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے کہی۔
صدر ٹرمپ نے اپنی تقریر میں چند مخصوص پیشکشیں کیں لیکن طالبان کے خلاف بھرپور فوجی کارروائی کا وعدہ کیا جنہوں نے امریکہ کی حمایت یافتہ افغان فورسز کے خلاف کامیابیاں حاصل کی ہیں۔
انہوں نے پاکستان پر دہشتگردوں کو پناہ دینے اور اس کی سرزمین پر بقول اس کے محفوظ ٹھکانے ہونے کا الزام لگایا۔
ٹرمپ نے کہا کہ وہ فوجیوں کی تعداد اور نئی حکمت عملی کی تفصیلات پر بات نہیں کریں گے لیکن امریکی حکام کا کہنا ہے کہ انہوں نے چار ہزار فوجی افغانستان بھیجنے کے وزیر دفاع جیمز میٹس کے منصوبے پر دستخط کردیئے ہیں۔
امریکی صدر نے کہا کہ ان کا تمام امریکی فوجیوں کو واپس بلانے کا ارادہ تھا لیکن امریکہ کے طویل ترین جنگ کے تفصیلی جائزے کے دوران ان کے فوجی مشیروں نے انہیں ایسا نہ کرنے پر قائل کردیا۔
افغان حکومت نے صدر ٹرمپ کے تازہ اعلان کا خیرمقدم کیا ہے لیکن طالبان نے خبردار کیا ہے کہ وہ افغانستان کو امریکی سامراج کا قبرستان بنائیں گے۔