Friday, 20 September 2019, 10:26:27 am

مزید خبریں

 
مسئلہ کشمیر پرسلامتی کونسل کا اجلاس پاکستان کی بڑی سفارتی فتح ہے،فخر امام
August 22, 2019

خصوصی کشمیر کمیٹی کے چیئرمین سید فخر امام نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے بارے میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس پاکستان کی بہت بڑی کامیابی اور بھارت کی سفارتی ناکامی ہے۔

انہوں نے ریڈیو پاکستان کے خبروں اور حالات حاضرہ کے چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سیکورٹی کونسل کے اجلاس میں کشمیر کو متنازعہ علاقہ تسلیم کرنا 1948اور 1949کی اقوام متحدہ کی قراردادوں کا اعتراف ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارتی وزیراعظم نریندرمودی ہٹلر کے نقش قدم پر چلتے ہوئے کشمیریوں کی نسل کشی کررہا ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت RSSکی ذہنیت کے قبضے میں ہے جس نے مہاتما گاندھی کو قتل کیا۔ مودی کی فسطائیت پر مبنی حکومت RSSکی انتہا پسند سوچ کی عکاس ہے جو اپنے مذموم مقاصد کے حصول کیلئے عالمی امن کو خطرے میں ڈال سکتی ہے انہوں نے کہا کہ نریندرمودی گجرات کا قاتل ہے جس نے دوہزار پانچ سو مسلمانوں کا قتل عام کیااور امریکہ اور برطانیہ میں ان کے داخلے پر پابندی لگادی گئی ۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کا دورہ امریکہ مسئلہ کشمیر کے بارے میں نتیجہ خیز ثابت ہوا کیونکہ صدرٹرمپ نے اس مسئلے پر اپنا کردار ادا کرنے کی پیشکش کی۔فخر امام نے کہا کہ بین الاقوامی انسانی حقوق کمیشن برطانوی دارلعلوم اور یورپین کی کشمیر میں خلاف ورزیوں کی حالیہ رپورٹوں میں عالمی سطح پر بھارت کو بے نقاب کردیا ہے۔انہوں نے اس معاملے پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں چین اور روس کے کردار کو بھی سراہا۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کرلیا جائیگا اور پاکستان بھارت کو اس کے توسیع پسندانہ عزائم میں کبھی کامیاب نہیں ہونے دے گا۔نیوز اور کرنٹ افئیرز کی سربراہ زہرہ عثمانی اور ڈائریکٹر نیوز عبدالہادی مایار نے فخر امام سے انٹرویو لیا۔