وفاقی وزیراطلاعات نےکہاہےکہ اگرکوئی مجرم عدالت میں پیش نہیں ہوتاتواس کےخلاف ملکی قوانین کے مطابق کارروائی کی جائےگی۔

pervaiz

جمہوری حکومت نےہمیشہ قانون اورعدالتوں کےفیصلوں پرعمل کیاہے:پرویزرشید
21 مارچ 2016 (13:16)
0

وفاقی وزیر اطلاعات پرویز رشید نے کہا ہے کہ جمہوری حکومت نے ہمیشہ قانون اور عدالتوں کے فیصلوں پر عمل کیا ہے اور اگر عدلیہ سابق صدر پرویز مشرف کو انٹرپول کے ذریعے واپس لانے کا حکم دیتی ہے تو حکومت اس کی تعمیل کرے گی۔ایک نجی ٹی وی چینل کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگر کوئی مجرم عدالت میں پیش نہیں ہوتا تو اس کے خلاف ملکی قوانین کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ پرویز مشرف کو خصوصی عدالت نے 31 مارچ کو طلب کیا ہے اور اگر وہ عدالت میں پیش نہیں ہوئے تو ان کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی ہوگی۔پرویز رشید نے کہا کہ 12 اکتوبر 1999 کو ایک منتخب وزیراعظم کو غیر قانونی طور پر گرفتار کیاگیا تھا اورملک کے عوام کو چالیس روز تک اس بارے میں بے خبر رکھا گیا کہ ان کے منتخب وزیراعظم کہاں ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مشرف کی روانگی کے حوالے سے سعودی عرب سمیت عالمی برادری کی طرف سے کوئی دبائو نہیں تھا۔ انہوں نے کہاکہ آرمی چیف کے ہمراہ وزیراعظم کے دوہر سعودی عرب کے دوران صرف دفاعی امور پر تبادلہ خیال کیاگیا۔ایک اور سوال پر وفاقی وزیر نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان پرویز مشرف سے متاثر تھے اور انہوں نے پرویز مشرف کے وزیراعظم بننے کی دعا کی ۔

قومی مصالحتی آرڈی نینس کے حوالے سے عمران خان کے بیان کو مسترد کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کو اس معاملے پر پارلیمنٹ میں بحث کرنی چاہیے۔