انہوں نے اسی سے زیادہ کتابیں اور شاعری،نثر،لسانیات، علم لسان، اور سوانح عمریوں پر سینکڑوں مضامین لکھے۔