Sunday, 21 April 2019, 01:20:21 am
بھارت کرتارپور راہداری پر معاہدے کو حتمی شکل دینے کیلئے وفد بھیجے،پاکستان
January 21, 2019

پاکستان نے بھارتی حکومت سے کہا ہے کہ وہ اس سال نومبر میں بابا گورو نانک کے پانچ سو پچاسویں جنم دن کے موقع پر کرتارپور رراہداری کھولنے کے لئے وزیراعظم عمران خان کے وعدے کی روشنی میں بات چیت اور معاہدے کے مسودے کو حتمی شکل دینے کے لئے فوری طور پر ایک وفد بھیجے۔

پیر کے روز جاری ایک پریس ریلیز میں وزارت خارجہ نے کہا کہ پاکستان نے اسلام آباد میں بھارتی ہائی کمیشن کے ذریعے بھارت کے ساتھ معاہدے کے مسودے کا تبادلہ کیا ہے۔

پاکستان کی حکومت نے جنوبی ایشیا اور سارک کے ڈائریکٹر جنرل کو پاکستان کی جانب سے رابطہ کار مقرر کیا ہے اور بھارتی حکومت سے اس سلسلے میں رابطہ کار مقرر کرنے کی درخواست کی۔

اس سے پہلے وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ سال28نومبر کو کرتارپور راہداری میں سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب کا افتتاح کیا۔ پاکستان نے بابا گرونانک کے 550 جنم دن کے تناظر میں خصوصاً بھارت سے سکھ برادری کی دیرینہ درخواست پر عملدرآمد کے لئے یہ قدم اٹھایا۔

 یہ قدم اسلامی اصولوں کے تحت اٹھایا گیا جو تمام مذاہب' بین المذاہب ہم آہنگی اور مذہبی رواداری کو فروغ دینے کی پاکستان کی پالیسی اور قائداعظم کے پرامن ہمسائیگی کے ویژن کے مطابق تھا۔

پاکستان خطے میں امن و استحکام لانے کے لئے اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔